بحرین کے اپوزیشن لیڈر کو جاسوسی کے الزام میں عمر قید کی سزا
بحرین کے اپوزیشن لیڈر کو جاسوسی کے الزام میں عمر قید کی سزا

بحرین کے اپوزیشن لیڈر کو جاسوسی کے الزام میں عمر قید کی سزا

ماناما: بحرین کی ایپلٹ کورٹ نے اپوزیشن لیڈر شیخ علی سلمان سمیت حزب اختلاف کے تین رہنماؤں کو قطر کے لیے جاسوسی کے مقدمے میں عمر قید کی سزا سنا دی۔

قطری خبر رساں ادارے الجزیرہ کے مطابق بحرین کی تین رکنی ایپلٹ کورٹ نے اپوزیشن جماعت الوفاق موومنٹ کے رہنما شیخ علی سلمان، شیخ حسن سلطان اور علی الاسود کو عمر قید کی سزا سنائی۔

رواں سال جون میں ہائیکورٹ نے تینوں رہنماؤں کی جاسوسی کے مقدمے میں رہائی کے احکامات جاری کیے تھے جس کے خلاف ایپلٹ کورٹ میں سماعت ہوئی۔

پبلک پراسیکیوٹر کے مطابق حکومت نے قطر سے تعلقات رکھنے پر پابندی عائد کر رکھی ہے جب کہ تین رکنی بینچ نے تینوں رہنماؤں کو ملک کے خلاف اقدامات کرنے پر سزا سنائی۔

سزا پانے والے تینوں اپوزیشن رہنما عمر قید کی سزا کے خلاف عدالت سے رجوع کا حق رکھتے ہیں۔

اپوزیشن لیڈر شیخ علی سلمان ایک دوسرے مقدمے میں 4 سال قید کی سزا بھی کاٹ رہے ہیں۔

یاد رہے کہ بحرین سمیت سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات نے 2017 میں قطر سے ہر قسم کے تعلقات ختم کرنے کا اعلان کرتے ہوئے اپنے شہریوں کو قطر جانے اور کسی بھی قسم کے رابطے رکھنے پر پابندی عائد کردی تھی۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here