دفاع وطن کےلئے ہر قربانی دینے کےلئے تیار،پوری قوم دفاع وطن کیلئے شانہ بشانہ کھڑی ہے ، شیعہ علماءکونسل پاکستان
دفاع وطن کےلئے ہر قربانی دینے کےلئے تیار،پوری قوم دفاع وطن کیلئے شانہ بشانہ کھڑی ہے ، شیعہ علماءکونسل پاکستان

دفاع وطن کےلئے ہر قربانی دینے کےلئے تیار،پوری قوم دفاع وطن کیلئے شانہ بشانہ کھڑی ہے ، شیعہ علماءکونسل پاکستان
پاکستان ایٹمی قوت، قوم متحد، بھارت دھمکیاں بند کرے، مسائل جنگوں سے نہیں مذاکرات سے حل ہوتے ہیں، عارف واحدی

     اسلام آباد 24 فروری2019ء( جعفریہ پریس   )شیعہ علماءکونسل پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ عارف حسین واحدی نے کہاہے کہ بھارت ایک جانب سب سے بڑی جمہوریت کا راگ الاپتے نہیں تھکتا دوسری جانب مظلوم کشمیریوں پر ظلم و تشدد کی تمام حدیںپار کرچکا، مودی سرکار پاکستان کو دھمکیاں دینا بند کرے، ایٹمی قوت ہونے کے ساتھ پوری قوم پاک فوج کے ساتھ سیسہ پلائی ہوئی دیوار کی طرح کھڑی ہے،پاک وطن کے تحفظ کےلئے ہر قربانی دینے کےلئے تیار ہیں، مسائل جنگوں سے نہیں مذاکرات سے حل ہوتے ہیں، قائد ملت جعفریہ پاکستان کے فرمان کے مطابق مسئلہ کشمیر کا حل اقوام متحدہ کی قراردادوں اور کشمیری عوام کی امنگوں کے مطابق کیا جائے، او آئی سی کو آئی سی یو سے نکال کر فعال کیا جائے ۔

    ان خیالات کا اظہار انہوںنے مختلف سیاسی و مذہبی رہنماﺅں سے ملاقاتوں کے دوران کیا۔ علامہ عارف حسین واحدی نے کہاکہ بھارت خطے میں اپنی بالادستی کے خواب دیکھنا چھوڑ دے اور پاکستان کو خود مختار اور آزاد ریاست تسلیم کرے، تقسیم برصغیر سے آج تک نام نہاد جمہوریت کا دعویدار بھارت نے پاکستان کو دلی طور پر تسلیم نہیں کیا، لیکن ہم واضح کردیں کہ پاکستان تاقیامت رہنے کےلئے وجود میں آیا، پاکستان اسلامی دنیا کی نہ صرف واحد ایٹمی قوت ہے بلکہ پوری قوم دفاع وطن کیلئے محافظین وطن کے ساتھ سیسہ پلائی ہوئی دیوار کی طرح کھڑ ی ہوئی ہے ، پاکستانی قوم غیر ت مند ، بہادراور متحد ہے جو مادر وطن کا دفاع کرنا جانتے ہیں، اس لئے مودی سرکار دھمکیاں دینا بند کرے ، اگر انڈیا خود کو صحیح معنوں میں جمہوری ملک یا معاشرہ کہتاہے تو پھر مقبوضہ کشمیر سے اپنی ظالم و جابر فوج کو کیوں نہیں نکال رہا، کیوں وہاں کی عوام کے حق استصواب رائے میں روڑے اٹکا رہاہے؟سب سے بڑی جمہوریت کے دعویدار نے کشمیر میں ظلم و تشدد کی تمام حدیں پار کرلی ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھاکہ قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی کے فرمان کے مطابق مسئلہ کشمیر کا حل اقوام متحدہ کی قراردادوں اور کشمیری عوام کی امنگوں کے مطابق کیا جائے، او آئی سی کو بھی آئی سی یو سے نکال کر فعال کیا جائے۔انکا مزید کہنا تھا کہ جنگیں کبھی مسائل کا حل نہیں ہوتیں بلکہ مزید مسائل پیدا کرتی ہیں، معاملات صرف مذاکرات کے ذریعے ہی حل ہوتے ہیں، بھارت اپنی ہٹ دھرمی چھوڑے اور ریاست پاکستان کی مذاکرات کی پیشکش کو قبول کرکے مذاکرات کی میز پر آئے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here