• قائد ملت جعفریہ علامہ ساجد نقو ی کی ا پیل پر بھارت میں توہین آمیز ریمارکس پر ملک گیر احتجاج
  • قائد ملت جعفریہ پاکستان کی مختلف شخصیات سے ان کے لواحقین کے انتقال پر تعزیت
  • اسلامی تحریک پاکستان کا گلگت بلتستان حکومت میں شامل ہونے کا فیصلہ
  • علماء شیعہ پاکستان کے وفدکی وفاقی وزیر تعلیم سے ملاقات نصاب تعلیم پر گفتگو مسائل حل کئے جائیں
  • بلدیاتی انتخابات سندھ: اسلامی تحریک پاکستان کے امیدوار بلامقابلہ کامیاب
  • یاسین ملک کو دی جانے والی سزا ظلم پر مبنی ہے علامہ شبیر حسن میثمی شیعہ علماء کونسل پاکستان
  • ملی یکجہتی کونسل اجلاس علامہ شبیر میثمی نے اہم نکات کی جانب متوجہ کیا
  • کراچی میں دہشتگردی کی مذمت کرتے ہیں شیعہ علماء کونسل پاکستان صوبہ سندھ
  • اسلامی تحریک پاکستان کا اعلی سطحی وفد گلگت بلتستان کے دورے پر اسکردو پہنچے گا
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان ۸ شوال یوم جنت البقیع کے عنوان سے منائے گی

تازه خبریں

قبلہ اول پر اسرائیلی قبضہ قبول نہیں، اتحاد امت ہی مشکلات کا حل ہے، قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ ساجد نقوی

قبلہ اول پر اسرائیلی قبضہ قبول نہیں،جمعۃ الوداع کو یوم القدس ریلیاں نکالی جائیں گی ، سیمینار سے خطابراولپنڈی/اسلام آباد24ج2016(جعفریہ پریس )قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی نے قبلہ اول پر اسرائیلی ناجائز قبضے کی شدید مذمت کرتے ہوئے واضح کیا ہے کہ اتحاد امت ہی مسلمانوں کی مشکلات کا حل ہے۔مسلم ممالک مشترکہ مسائل پر ایک موقف اختیار کریں تو اسلام کی عظمت و سربلندی کا خواب شرمندہ تعبیر کیا جاسکتا ہے۔خدا نخواستہ فرقہ واریت کا شکار رہے تو استعماری قوتوں کے مقابلے کیلئے قربانیاں زیادہ دینا ہوں گی۔ملک میں امن و امان کے حوالے سے بگڑتے ہوئے حالات کسی بڑے سانحہ کی خبر دے رہے ہیں۔دہشتگردوں کی کمر توڑے بغیر امن و امان ممکن نہیں۔کراچی میں سیکورٹی اداروں کے الرٹ اور ہر جگہ موجودگی کے دعووں کے باوجود عاشق رسول و اہلبیت قوال امجد صابری کی شہادت اور چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ کے صاحبزادے کا اغوا غیر معمولی واقعات ہیں۔میرخلیل الرحمن میموریل سوسائٹی (جنگ گروپ آف نیوز پیپر)اورہ امامیہ آرگنائزیشن پاکستان کے زیر اہتمام لاہور کے مقامی ہوٹل میں سیمینار بعنوان القدس بیداری اسلامی سے خطاب کررہے تھے۔ مقررین میں علامہ راغب حسین نعیمی، لعل مہدی خان، علامہ محمد افضل حیدری اور دیگر بھی شامل تھے۔فلسطینیوں سے اظہار یکجہتی کرتے ہوئے علامہ ساجد علی نقوی نے کہا کہ مسلمانوں کے پاس وسائل موجود ہیں مگر انہیں امت کی بیداری اور تحفظ کیلئے استعمال نہیں کیا جارہا ہے۔ جس کی وجہ اتحاد کا فقدان ہے۔انہوں نے تجویز دیتے ہوئے کہا کہ قدس کی آزادی کیلئے او آئی سی کو مضبوط کیا جائے یا مسلم ممالک میں عوامی لیڈر شپ اپنے اندر ہم آہنگی پیدا کرکے قدس کی آزادی کیلئے جدوجہد کریں اور میری رائے میں انقلاب اسلامی کے سپریم لیڈر آیت ا۔۔سید علی خامنہ ای میں وہ تمام صلاحیتیں اور شرائط موجود ہیں جو مسلم امہ کی لیڈر شپ اور قیادت کیلئے ضروری ہوں۔اس لیے تمام امت مسلمہ کو ان کی رہبری میں متحد ہو کر قدس کی آزادی کی تحریک کو تیز ترکرنا چاہیئے۔انہوں نے کہا کہ مشرق وسطیٰ میں ایک منصوبے کے تحت شدید محاذ آرائی و قتل وغارت گری کا بازار گرم ہے۔اس کا مقصد اسرائیل کو محفوظ رکھنا ہے اور خود اس کی آزادی کا راستہ روکنا ہے۔اس طرح تمام ملکوں میں خاص طور پر پاکستان میں بھی مقامی قوتوں کے ذریعے قتل و غارت و تکفیری زوروں پر ہے مسلم امہ کی مقامی قوتیں کمزور ہورہی ہیں۔ اور اس کے نتیجے میں اسرائیل محفوظ ہورہا ہے قدس کی آزادی دور ہو رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسلام امن و سلامتی کا مذہب ہے۔ اس کی مختلف مسالک کی تعبیروں کو ہی امت کہا جاتا ہے۔ اس حوالے سے پاکستان میں دنیا بھر کے مسلمانوں کیلئے اتحاد اسلامی کی قابل تقلید فضا موجود ہے۔جس پر عمل کر کے تمام مکاتب کر کو ایک پلیٹ فارم پر لایا جاسکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ قبل اول کی آزادی مسلمانوں کی ناموس اور اسلام کی سربلندی کا مسئلہ ہے۔ جس کیلئے ہمیں اپنی صفوں میں اتحاد پیدا کرنا ہوگا۔بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح ؒ نے اسرائیل کو ناجائز ریاست قرار دیا تھا کہ فلسطین انبیاء علیہم السلام کی سرزمین ہے، اس پر اسرائیل کا ناجائز قبضہ کوئی آزادی پسند انسان تسلیم نہیں کرسکتا۔آج اسرائیلی درندے فلسطینی ماؤں، بہنوں اوربیٹیوں کی بے حرمتی اور نوجوانوں و بچوں پر ظلم کر کے اپنی سیاہ تاریخ لکھ رہے ہیں۔ لیکن سوچنے کی بات ہے کہ ہماری شرعی ذمہ داری کیا بنتی ہے۔ہمیں آگے بڑھنا ہوگا کہ اسرائیلی ہاتھوں کوروک سکیں اور فلسطینیوں کو صیہونی زنجیروں سے آزادی دلا سکیں۔ اس حوالے سے بانی انقلاب اسلامی حضرت امام خمینی ؒ نے جمعۃ الوداع کو عالمی یوم القدس قرار دے کرفلسطینیوں سے ا ظہار یکجہتی کی بنیادی رکھی جو آج تک جاری ہے۔فلسطینی ریاست کے قیام اور قبلہ اول کی آزادی تک جاری رہے گی۔ قائد ملت جعفریہ نے کہا کہ جمعۃ الوداع یکم جولائی 25رمضان المبارک کو دنیا بھر کی طرح پاکستان میں بھی یوم القد س کی عظیم الشان ریلیاں نکالی جائیں گی۔ جس کے لے انہوں نے تنظیموں کو ہدایت جاری کردی ہیں۔ اور القدس کمیٹی بھی قائم کردی ہے۔