ملی یکجہتی کونسل کا شدت پسندی اور فرقہ واریت کے خاتمے میں بہت بڑا کردار ھے
ملی یکجہتی کونسل کا شدت پسندی اور فرقہ واریت کے خاتمے میں بہت بڑا کردار ھے

ملی یکجہتی کونسل کا شدت پسندی اور فرقہ واریت کے خاتمے میں بہت بڑا کردار ھے

لاہور :جعفریہ پریس 
ملی یکجہتی کونسل پاکستان کا ایک اھم مشاورتی اجلاس 29 اگست 2018 بروز بدھ کو جماعت اسلامی کے مرکز منصورہ میں منعقد ہوا جس کی صدارت مرکزی سیکٹری جنرل جناب لیاقت بلوچ نے کی،علامہ عارف حسین واحدی مرکزی سیکریٹری جنرل شیعہ علماء کونسل پاکستان، جناب ثاقب اکبر،مولانا عبدالغفار روپڑی، خواجہ معین الدین محبوب کوریجہ، اسد اللہ بھٹو، میرزا ایوب بیگ، ڈاکٹر فرید احمد پراچہ، نصرت شھانی، اسامہ بخاری، مولانا عبدالوھاب روپڑی، پیر سید صفدر گیلانی، پیر غلام رسول اویسی، رضیت باللہ، اسد عباس نقوی، مولانا عزیز الرحمن ثانی، پیر لطیف الرحمن شاہ، نذیر جنجوعہ، میاں رضوان نفیس، قاری جمیل الرحمن اختر، اور مظھر محمود صدیقی نے شرکت کی-
اجلاس میں مرکزی قائدین سے یہ سفارش کی گئی کہ ملی یکجہتی کونسل کا شدت پسندی اور فرقہ واریت کے خاتمے میں بہت بڑا کردار ھے اس لئے اسے بھرپور قوت سے چلانا چاھئے مذھبی ملی ایشوز پر کردار ادا کرنا،آئین میں اسلامی شقوں کا تحفظ ،امن و امان،اتحاد و وحدت کا قیام،دینی اقدار کا تحفظ یہ وہ امور ھیں جن کے لئے اس کونسل پوری قوت سے جاری رکھا جائے۔
علامہ عارف واحدی نے دستور میں ترمیم کے حوالے سے کچھ تجاویز دیں جن کے لئے لیاقت بلوچ کی سربراھی میں ایک کمیٹی قائم کر دی گئی،یہ بھی طے ھوا کہ محرم کے حوالے سے مشترکہ پروگرام کئے جائیں گے اور شھدائ کربلا کی قربانی کو خراج تحسین پیش کیا جائے گا-

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here