پنجاب بجٹ نے عوام کو مایوس کیا ہے، عوامی فلاح و بہبود کے لئے کچھ نہیں رکھا گیا، علامہ سبطین سبزواری
بجٹ کا ہدف آئندہ انتخا بات کو بھی ہائی جیک کرنا ہے ،
حکمرانوں کی توجہ کا مرکز لاہور کے چند روڈ رہے تو جمہوریت کا خوا ب چکنا چور ہوجائے گا، صدر اسلامی تحریک پنجاب
 راولپنڈی(    ) اسلامی تحریک پاکستان صوبہ پنجاب کے صدر علامہ سید سبطین حیدر سبزواری نے کہا ہے کہ پنجاب کے بجٹ نے بھی عوام کو مایوس کیا ہے، عوامی فلاح و بہبود کے لئے کچھ نہیں رکھا گیا،بجٹ کا ہدف عوام کو لالی پاپ دینا ہے، تاکہ آئندہ انتخا بات کو بھی ہائی جیک کیا جاسکے۔حکومت کی توجہ کا مرکز لاہور کے چند روڈ رہے تو جمہوریت کی مضبوطی کا خوا ب چکنا چور ہوجائے گا۔ میڈیا سیل کی طرف سے جاری بیان میں انہوںنے کہا کہ اسلامی فلاحی ریاست کا خواب شرمندہ تعبیر نہ ہوا تو لوگ حکمرانوںکے گریبانوں تک پہنچ جائیں گے۔ بجٹ میں عوام کو ریلیف نہیں دیا جاسکا۔غریبوں کے حصے میں صرف دھکے اور فاقے رہ گئے ہیں، بجٹ عوام کی زندگی میں کوئی ریلیف نہیں لاسکا ۔ موجود ہ حکومت مہنگائی کے اعدادو شمار نیک نیتی سے پیش کرے۔ہوشربا مہنگائی کے تناسب سے ملازمین کی تنخواہوں میں 10۔ فیصدا ضافہ اونٹ کے منہ میں زیرے کے مترادف ہے۔ علامہ سبطین سبزواری نے کہا کہ ملازمین کی کم از کم تنخواہ 15000روپے غریب کے ساتھ مذاق ہے۔ اتنی کم اجرت میں کوئی اپنے گھر کا خرچ کیسے چلاسکتا ہے، یہی وجہ ہے کہ سٹریٹ کرائم میں بے پناہ اضافہ ہوتا جارہا ہے۔ معاشرے میںہیجان اورمایوسی کے باعث نفسیاتی بیماریاں بڑھتی جارہی ہیں۔ لوگ ایک سے زیادہ نوکریاں کرنے پر مجبور ہیں۔ہسپتالوں میں چلے جائیں تو غریب کو علاج معالجے کی سہولیات میسر نہیں، تعلیم کو لٹیرے نجی سیکٹر کے حوالے کردیا گیا ہے۔ جو من چاہی فیسیں وصول کرتے ہیں۔ اس وجہ سے معاشرہ بھی طبقاتی کشمکش میں ہے۔ علامہ سبطین سبزواری نے کہا کہ حکومت کی ترجیح میں عوام کی بجاے سرمایہ دارانہ طبقاتی نظام ہے۔ بجٹ سالانہ تخمینہ ہوتا ہے، مگر حکومت ہر ماہ منی بجٹ کا اعلان کرتی رہتی ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here