ڈیرہ اسماعیل خان میں تین افراد کا قتل انتظامیہ پہ سوالیہ نشان ہے علامہ شبیر میثمی

ڈیرہ اسماعیل خان میں تین افراد کا قتل انتظامیہ پہ سوالیہ نشان ہے علامہ شبیر میثمی

جعفریہ پریس پاکستان : راولپنڈی / اسلام آباد 

شیعہ علماء کونسل پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ ڈاکٹر شبیر حسن میثمی نے ڈیرہ اسماعیل خان میں دو بھائیوں سمیت تین افراد کے قتل کے لرزہ خیز واقعے پر رنج و غم کا اظہارِ کرتے ہوئے مجرموں کو گرفتار کر کے قرار واقعی سزاء دینے کا مطالبہ کیا ہے۔ اپنے بیان میں علامہ شبیر حسن میثمی نے کہا کہ یہ واقعے صوبہ خیبر پختونخوا میں امن وامان کی صورتحال کو ثبوتاز کرنے کی مذموم کوشش ہے۔ انہوں نے مزید کہا ہے کہ عوام کے جان و مال کا تحفظ حکومت کی اولین ذمہ داری ہے اور یہ واقعہ کے پی میں امن کی صورتحال پر سوالیہ نشان ہے۔ انہوں کہا کہ رزق ہلال کمانے کی غرض سے اپنی دکانوں پر بیٹھے مقتولین پر دہشت گردوں کا دھاوا اور پھر فرار ثابت کرتا ہے کہ ریاست مدینہ کا دعوہ کرنے والے تاحال عوام کو تحفظ جیسی بنیادی حق فراہم کرنے میں ناکام ہیں۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ ڈیرہ جیسے حساس علاقے میں ایسے واقعات کی روک تھام کے لیے موثر حکمت عملی اپنائے اور اس واقعے کے مجرموں کو فوری گرفتار کر کے کیفر کردار تک پہنچائے تاکہ ملک دشمن عناصر کے مذموم عزائم کو خاک میں ملا کر صوبے کے امن کو ثبوتاز ہونے سے بچایا جا سکے۔ علامہ ڈاکٹر شبیر حسن میثمی نے شہداء کے خانوادے سے تعزیت اور صبر کی دعا بھی کی۔