کشمیری قیدیوں کی قیدطویل کرنے کیلئے ان کوقانونی رسائی نہیں دی جاتی،حریت فورم
کشمیری قیدیوں کی قیدطویل کرنے کیلئے ان کوقانونی رسائی نہیں دی جاتی،حریت فورم

کشمیری قیدیوں کی قیدطویل کرنے کیلئے ان کوقانونی رسائی نہیں دی جاتی،حریت فورم

کشمیری رہنما میرواعظ عمرفاروق کی قیادت میں حریت فورم نے کہا ہے کہ بھارتی انتظامیہ کشمیری قیدیوں کے مقدمات جان بوجھ کر شفاف انداز سے نہیں چلارہی تاکہ ان کی غیر قانونی قیدکوطویل کیا جاسکے۔سرینگرسے جاری ایک بیان میں فورم نے تیئس سال کی غیرقانونی قید سے رہاہونے والے چارکشمیریوں کاخیرمقدم کیا ۔فورم نے کہا کہ بھارت کی جیلوں میں گزشتہ پندرہ سے پچیس سال سے غیرقانونی طورپر قیدزیادہ ترکشمیریوں کو مقدمے لڑنے کی اجازت نہیں دی جاتی جس کا مقصدان کی قیدکوطویل کرناہے۔دوسری جانب بھارت کی بدنام زمانہ قومی تحقیقاتی ایجنسی نے آج شمالی کشمیرکے ضلع بارہ مولامیں چارمقامات پرچھاپے مارے ۔اس کارروائی میں تحقیقاتی ایجنسی کے ساتھ بھارتی پولیس اورنیم فوجی دستوں نے کنٹرول لائن کے پارتجارت کرنے والے چارافرادکے گھروں میں تلاشی لی اور انہیں ہراساں کیا۔ بھارتی فوج نے مقبوضہ کشمیر کے ضلع کپواڑہ کے علاقہ ہندواڑہ میں بھی آج صبح سویرے سے محاصرے اورتلاشی کی کارروائیاں شروع کر دیں۔محاصرے اور تلاشی کی کارروائی میں گھر گھر تلاشی لینے کا سلسلہ جاری ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here