جعفریہ پریس – موٹر سائیکل پر سوار دہشتگردوں نے بس کے اندر اندھا دھند فائرنگ کر دی، جسکے نتیجے میں دو جوان مرزا حسین اور اسد اللہ موقعے پر شہید ہوگئے، جبکہ ایک زخمی محمد علی ہسپتال میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے شہید ہوگیا۔
رپورٹ کے مطابق کوئٹہ کے علاقے سیٹلائیٹ ٹاؤن میں ایک مرتبہ پھر تکفیری انسانیت دشمن دہشتگردوں کیجانب سے شیعہ ہزارہ برادری کو نشانہ بنایا گیا۔  پیر کے روز تین شیعہ ہزارہ جوانوں کو اس وقت نشانہ بنایا گیا، جب وہ مسافر کوچ میں سوار ہوکر زیارات کی طرف جانے کی تیاری میں صروف تھے۔ موٹر سائیکل پر سوار دہشتگردوں نے بس کے اندر اندھا دھند فائرنگ کردی، جس کے نتیجے میں دو جوان مرزا حسین اور اسد اللہ موقعے پر شہید ہوگئے جبکہ ایک زخمی محمد علی ہسپتال میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے شہید ہوگیا۔ واقعے کے فوراً بعد سکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لیکر ضروری کارروائی شروع کر دی، لیکن دہشتگرد ہمیشہ کی طرح فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔

اعلیٰ سکیورٹی اور حکومتی اداروں کی جانب سے ملک بھر میں نیشنل ایکشن پلان کے اجراء کے دعوے کے با وجود اس سانحہ کا رونما ہونا ان اداروں کی کارکردگی کیلئے سوالیہ نشان ہے ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here