اسلامی تحریک پاکستان نے پانامہ لیکس اور دیگر کیسز کے حوالے سے اعلیٰ عدالتوں کی جانب سے وسیع تر تناظر میں مثالی فیصلوں کی امید کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایسے مثالی فیصلے قوم کے لئے قابل قبول ہوں گے جبکہ اسلامی تحریک پاکستان نے پانامہ لیکس کے حوالے سے آمدہ جے آئی ٹی کی رپورٹ پر مختلف سیاسی جماعتوں کے متضادبیانات کو    تمام جماعتوں کا جمہوری حق قرار دیتے ہوئے موقف اپنایاکہ رپورٹ پر عدالت عظمیٰ کی جانب سے بھی وسیع تر تناظر میں کیے گئے فیصلے ہی ہمارے لیے قابل قبول ہوں گے۔
راولپنڈی میں اسلامی تحریک پاکستان کے مرکزی سیاسی سیل کا اہم اجلاس زیر صدارت اسلامی تحریک پاکستان کے سربراہ اور قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی کی زیر صدارت منعقد ہوا جس میں چاروں صوبوں سمیت گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر سے آنے والے سیاسی سیل کے ممبران نے تفصیلی غور و غوض کے بعدموجودہ اور مستقبل کی سیاسی صورتحال پر جامع فیصلے ترتیب دیئے جس پر آج اسلامی تحریک پاکستان کی مرکزی سنٹرل کمیٹی کے منعقدہ اجلاس میں توسیق کے بعد فوری عملدآمد شرو ع کر دیا جائے گا۔اجلاس میں آئندہ جنرل انتخابات میں اسلامی تحریک پاکستان کے بھرپور حصہ لینے کے موقف کا اعادہ کرتے ہوئے صوبوں سے موصولہ رپورٹوں کے تناظر میں آئندہ انتخابات کے موقع پر خالص سیاسی انداز میں حصہ لینے کا فیصلہ بھی کیا گیا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here