انڈونیشیائی صدر نے ایرانی صدر کیساتھ بین الاقوامی مسائل پر مذاکرات کا حوالے دیتے ہوئے کہا کہ مشرق وسطی کے بحران اور علاقائی ممالک یمن، شام اور میانمار کے مسائل کو صرف امن مذاکرات کیساتھ حل کیا جا سکتا ہے.

يہ بات ايران كے دورے پر آئے ہوئے انڈونيشيائي صدر’ جوكو ويدودو’ نے بدھ كے روز ايراني صدر حسن روحاني كيساتھ ايك مشتركہ پريس كانفرنس ميں خطاب كرتے ہوئے كہي.

اس موقع پر انہوں نے كہا كہ انڈونيشيا كي حكومت دنيا اور مشرق وسطي كے مسائل كے حل كيلئے اپنے اہم كردار پر زور دے رہا ہے.

انہوں نے كہا كہ اس اجلاس كے دوران اہم امور سميت دونوں ممالك كے درميان اقتصادي اور توانائي شعبے ميں دوطرفہ تعلقات كي توسيع پر مذاكرات كي جاتي ہے.

جوكو ويدودو نے كہا كہ انڈونيشيا 500ہزار ٹن ايراني مائع گيس خريدنے كا خواہاں ہے.

انہوں نے مزيد كہا كہ دونوں فريقيں كے درميان ايران كيجانب سے انڈونيشيا ميں ريفائنريوں، پاور پلانٹ كي تعمير، اضافہ بجلي كي پيداوار پر تبادلہ خيال كئے گئے.

انہوں نے كہا كہ نجي اور صنعتي شعبے كے 60 اعلي حكام نے اس سركاري دورے ميں شركت كي ہيں.

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here