سندھ ٹیکسٹ بک بورڈ نے غلطی کا اعتراف کرلیا تصحیح شدہ چھٹی جماعت کی کتاب جاری کرنے کا نوٹفکیشن جاری
سندھ ٹیکسٹ بک بورڈ نے غلطی کا اعتراف کرلیا تصحیح شدہ چھٹی جماعت کی کتاب جاری کرنے کا نوٹفکیشن جاری

جعفریہ پریس سندھ : گزشتہ دنوں سندھ ٹیکسٹ بک بورڈ کی جانب سے چھٹی جماعت کی کتاب میں حضرت علی علیہ السلام کی شہادت کی تاریخی حقیقیت کو غلط بیان کیا گیا کہ حضرت علی ابن ملجم کی ضربت سے مسجد کوفہ کے راستے میں شہید ہوئے جبکہ مولا علی ؑ ضربت سے مسجد کوفہ میں دوران نماز زخمی ہوئے تھے اس سلسلے میں شیعہ علماء کونسل پاکستان صوبہ سندھ کا اعلی سطحی وفد چیئرمین سندھ ٹیکسٹ بک بورڈ جامشورو کے چیئرمین سے ملا  مزید علامہ افتخار حسین نقوی نے بھی سندھ ٹیکسٹ بک بورڈ کو خط لکھا جس میں اس حوالےسے غلطی اور اس کی تصحیح پر زور دیا گیا جس پر ادارے نے اس غلطی کو کمیٹی میں بھیجا اور کمیٹی نے غلطی کا اعتراف کیا سندھ ٹیکسٹ بورڈ کی جانب سے جاری نوٹفکیشن میں غلطی کا اعتراف کیا گیا ہے اور شعبہ اسلامیات کے متعقلہ افراد سے اس غلطی کی تحقیقات بورڈ کرے گا علاوہ بورڈ نے پرنٹ کتابوں کی جگہ نئی کتا جاری کرنے کا اعلان کیا ہے اور آئندہ اس قسم کی غیر ذمہ دارانہ حرکت سے محتاط رہنے کا عزم بھی کیا ہے سندھ ٹیکسٹ کی جانب سے تمام مسلمانوں کی دل آزاری پر معذرت بھی کی گئی ہے 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here