زیارات کے لیے تفتان راستہ صدیوں پرانا ہے، کوئی روک نہیں سکتا، علامہ سبطین سبزواری
زیارات کے لیے تفتان راستہ صدیوں پرانا ہے، کوئی روک نہیں سکتا، علامہ سبطین سبزواری

زیارات کے لیے تفتان راستہ صدیوں پرانا ہے، کوئی روک نہیں سکتا، علامہ سبطین سبزواری
خواجہ آصف مخالفین پر تنقید کے لئے زائرین پر سیاست سے بازآجائیں، لیگی قیادت بیان کا نوٹس لے
کورونا وائرس کے باعث جان کی بازی ہارنے والے مریض ایران نہیں، سعودی عرب اور دوبئی سے آئے
بم دھماکوں، خود کش حملوں اور فائرنگ کے واقعات کے باوجود راستے کو نہیں چھوڑا، صوبائی صدر شیعہ علما کونسل کی میڈیا سے گفتگو
لاہور ( جعفریہ پریس) شیعہ علما کونسل شمالی پنجاب کے صدر علامہ سید سبطین حیدر سبزواری نے سابق وزیر دفاع خواجہ آصف کے ایران عراق سے آنے والے پاکستانی زائرین کے بارے میںبیان کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ لیگی رہنما حکومت کے خلاف بیان بازی کے لئے متعصبانہ اورفرقہ وارانہ سوچ کی بجائے حقائق پر بات کریں۔ اور اپنی پارٹی کے” ووٹ کو عزت دو” کے متروک نعرے پر توجہ دیں۔ زلفی بخاری کا زائرین کی آمدورفت سے کوئی تعلق ہے اور نہ ہی وہ اس میں کوئی کردار ادا کرنے کی پوزیشن میںہیں ۔ خواجہ آصف اپنے سیاسی مخالفین پر تنقید کے لئے دیگر موضوعات کا انتخاب کرلیں ۔زائرین پر سیاست سے بازآجائیں۔ قومی جماعت کے مرکز ی رہنما سے ایسی احمقانہ تنقید کی توقع نہیں کی جاسکتی تھی۔ ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ مسلم لیگ ن کی قیادت خواجہ آصف کے بیان کا نوٹس لے۔تفتان بارڈر کے ذریعے برصغیر کے مسلمان صدیوں سے کربلا نجف کاظمین اور مشہد مقدس زیارات کے لیے آتے جاتے ہیں۔ اس راستے کو ہم نے سینکڑوں جانیںقربان کرکے بھی جاری رکھا ہے، تفتان راستے کو استعمال کرنے سے ہمیں کوئی روک سکا ہے اور نہ ہی آئندہ روک سکے گا۔ پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن کی حکومتوں کے دوران زائرین کی بسوں پر دہشت گردی کے واقعات معمول رہا۔ زائرین کو بم دھماکوں، خود کش حملوں اور فائرنگ کے واقعات میںشہید کیا گیا۔ مگر محبان اہل بیت علیہم السلام نے اس راستے کو نہیں چھوڑا۔ تمام پاکستانی زائرین اپنے وطن واپس آئے ہیں کوئی روک نہیں سکتا تھا۔ میڈیا سے گفتگو میںعلامہ سبطین سبزواری نے واضح کیا کہ زائرین سے کورونا وائرس سے پھیلنے کے واقعات انہیں تفتان میں بغیر حفاظتی اور طبی اقدامات کے اکٹھے رکھنے اور غیر انسانی رویہ کی وجہ سے پیدا ہوئے جس کی ذمہ داری وفاقی حکومت پر عائد ہوتی ہے ۔مردان اورپشاور سے آنے والے کورونا وائرس کے اپنی جان کی بازی ہارنے والے مریض ایران نہیں، سعودی عرب اور دوبئی سے آئے تھے۔ اللہ تعالیٰ ان کی مغفرت کرے ، سوگوار خاندانوں سے اظہار تعزیت کرتے ہیں۔
 جاری کردہ: مرزا تقی علی ۔۔۔۔سیکرٹری اطلاعات شمالی پنجاب۔۔۔۔03016696095

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here