سید محمد دہلوی مرحوم برصغیر کے خطیب اعظم اور بلند پایہ عالم دین تھے ،قائد ملت جعفریہ علامہ ساجد نقوی

سید محمد دہلوی مرحوم برصغیر کے خطیب اعظم اور بلند پایہ عالم دین تھے ، علامہ ساجد نقوی
سید محمد دہلوی نے پرامن عوامی طرز احتجاج کی داغ بیل ڈالی اور اپنے جائز مطالبات کو منطقی انداز میں پیش کیا، قائد ملت جعفریہ
علامہ سید محمد دہلوی ؒ ؒ کی قیادت میں حقوق کے دفاع اور تحفظ کی خاطر جو کارواں چلا تھا وہ آج بھی رواں دواں ہے۔
راولپنڈی/اسلام آباد20 اگست 2020 ء( جعفریہ پریس پاکستان) قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی نے کہا کہ وطن عزیز کی تشکیل و تعمیر اور سا لمیت و دفاع میں عوام نے علماءو اکابرین کی قیادت میں صبر آزما جدوجہد اور لازوال قربانیاں پیش کیں جن میں قائد مرحوم علامہ سید محمد دہلویؒ کی جدوجہد اور کاوشیں نمایاں حیثیت کی حامل ہیں انہوں نے 10جنوری 1964ءمیں حقوق کیلئے جدوجہد کا آغاز کیا جب ملک بھر کے علماءو اکابرین نے انہیں قائد تسلیم کیا یہی وجہ ہے کہ آج بھی ان کی گرانقدر خدمات ناقابل فراموش ہیں۔دور حاضر میں بھی پاکستان کے عوام ملکی سلامتی اور قومی وحدت کی خاطر صبر و تحمل سے کام لے رہے ہیں مگر ذمہ داران صورتحال کی سنگینی کا ادراک نہیں کرپا رہے۔قائد اول علامہ سید محمد دہلویؒ کی برسی کے موقع پرعلامہ ساجد نقوی نے کہا کہ سید محمد دہلوی مرحوم برصغیر کے خطیب اعظم اور بلند پایہ عالم دین اور بے بدل قائد تھے جنہوں نے پرامن عوامی طرز احتجاج کی داغ بیل ڈالی اور اپنے جائز مطالبات کو منطقی انداز میں پیش کیا اور پیرانہ سالی کے باوجود ملت کی خدمت میں کوئی کسر باقی نہیں چھوڑی۔ اس مشکل دور میں کم وسائل کے باوجود مسلسل اور انتھک محنت سے ملت کو شعور اور اتحاد کی نعمت کا احساس دلایا۔علامہ ساجد نقوی نے مزید کہا کہ علامہ سید محمد دہلوی ؒ‘ علامہ مفتی جعفر حسین ؒاور علامہ عارف الحسینی شہید ؒ کی قیادت میں جو حقوق کے دفاع اور تحفظ کی خاطر جو کارواں چلا تھا وہ آج بھی رواں دواں ہے اور ہم ان قائدین کی فکر سے الہام لیتے ہوئے باوجود بے شمار مسائل و مشکلات کے‘ نہ صرف حقوق اورشہری آزادیوں کے تحفظ کی جدوجہد جاری رکھے ہوئے ہیں بلکہ ملک میں اتحاد و وحدت کے فروغ اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی کی ترویج کے لئے ہمہ وقت مشغول ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here