فلپائن کے صدر امریکی صدر باراک اوباما پر تنقید کرنے کے بعد عالمی میڈیا کی شہہ شرخیوں میں رہ چکے ہیں جبکہ اب انہوں نے ایک بار پھر امریکی حکام کی پالیسیوں پر شدید تنقید کی ہے اور کہا ہے کہ امریکی حکام احمق ہیں۔

فلپائن کے صدر رودریگو دوٹرٹے نے منیلا کو بندوقیں فروخت نہ کرنے کے واشنگٹن کے فیصلے پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ جن امریکیوں نے یہ فیصلہ کیا ہے احمق ہیں۔ فلپائن کے صدر نے کہا کہ اگر امریکا نے فلپائن کو ہتھیار فروخت نہیں کئے تو ان کا ملک روس اور چین سے اسلحہ خریدے گا۔

فلپائن کے صدر اس سے پہلے بھی امریکا کے سلسلے میں انتہائی سخت بیانات دے چکے ہیں انہوں نے اس سے قبل اپنے ایک خطاب میں کہا کہ اگرچہ انہیں پہلے واشنگٹن پر اعتماد تھا لیکن اب وہ اپنے سب سے بڑے اتحادی پر نہ تو اعتماد کرتے ہیں اور نہ ہی فلپائن کی نظر میں امریکا کا کوئی احترام باقی رہ گیا ہے۔

واضح رہے کہ امریکی سینیٹ نے فلپائن کی پولیس کے لئے چھبیس ہزار بندوقیں فروخت کرنے پر پابندی لگا دی ہے جس کے بعد فلپائن کے صدر نے امریکی حکام اور سینٹیروں کے بارے میں انتہائی سخت الفاظ استعمال کرتے ہوئے کہا کہ ہم فلپائن میں اب خود اسلحے تیار کر رہے ہیں اور امریکی حکام احمق ہیں۔

 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here