• گلگت و بلتستان کی عوام اس وقت شدیدمعاشی مشکلات سے دوچارہے
  • حکومـــت بجــٹ میں عوامی مسائــل پر توجہ دے علامہ شبیر حسن میثمی
  • جی 20 کانفرنس منعقد کرنے سے کشمیر کےمظلوم عوام کی آواز کو دبایانہیں جا سکتا
  • پاراچنار میں اساتذہ کی شہادت افسوسناک ہے ادارے حقائق منظر عام پر لائیں شیعہ علماء کونسل پاکستان
  • رکن اسمبلی اسلامی تحریک پاکستان ایوب وزیری کی چین میں منعقدہ سیمینار میں شرکت
  • مرکزی سیکرٹری جنرل شیعہ علماء کونسل پاکستان کا ملتان و ڈیرہ غازی خان کا دورہ
  • گلگت بلتستان کے طلباء کے لیے عید ملن پارٹی کا اہتمام
  • فیصل آباد علامہ شبیر حسن میثمی کا فیصل آباد کا دورہ
  • شہدائے جے ایس او کی قربانی اور ان کی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا مرکزی صدر جے ایس او پاکستان
  • علامہ شبیر حسن میثمی سے عیسائی پیشوا کی ملاقات

تازه خبریں

بلوچستان میں دہشت گردی ریاستی اداروں کے لئے چیلنج ہے، علامہ سبطین سبزواری

 بلوچستان میں دہشت گردی ریاستی اداروں کے لئے چیلنج ہے، علامہ سبطین سبزواری
کوئٹہ تا پارا چنار دہشت گردی روکنے کے لئے فیصلہ کن آپریشن کرنا ہوگا۔
دہشت گرد انسانیت کے دشمن ا ورخونی درندے ہیں ، مستونگ میں ہزارہ برادری کے افرادپر دہشت گردانہ حملہ قابل مذمت، تعزیتی بیان
لاہور(    ) شیعہ علما کونسل پنجاب کے صدر علامہ سید سبطین حیدر سبزواری نے کہا ہے کہ سخت اقدامات کے باوجود دہشت گردی کا جاری رہنا ریاستی اداروں کے لئے چیلنج ہے۔ بلوچستان کے علاقے مستونگ میں ہزارہ برادری کے افرادپر دہشت گردانہ حملے سے واضح ہوگیا کہ سکیورٹی اداروں کے اقدامات ناکافی ہیں۔ تعزیتی بیان میں قیمتی جانی نقصان پر دلی افسوس کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کوئٹہ تا پارا چنار دہشت گرد پھر ٹارگٹ کلنگ کے ذریعے بدامنی کا بازار گرم کرنے کی کوشش کررہے ہیں جنہیں روکنا ہوگا اور فیصلہ کن آپریشن کرنا ہوگا۔ان کا کہنا تھا کہ دہشت گرد انسانیت کے دشمن اورخونی درندے ہیں جن کاکسی مذہب و مسلک سے تو دور، انسانیت سے بھی دور کا واسطہ نہیں۔معصوم لوگوں کا خون بہانے والے کسی رعایت کے مستحق نہیں۔جاں بحق افراد کے لواحقین سے تعزیت اور شہداءکے بلندی درجات کی دعاکرتے ہوئے علامہ سبطین سبزواری نے مطالبہ کیا کہ دہشت گردوں کے سہولت کاروںکے خلاف بھی کارروائی کی جائے ، تاکہ دہشت گردی کا جڑ سے خاتمہ کیا جاسکے ۔انہوں نے کہاہے کہ بلوچستان میں سی پیک کی کامیابیوں کے دعوے کرنے والی حکومت اور اداروں کا ہزارہ برادری کو تحفظ فراہم کرنے میں ناکامی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔ایک عرصے سے ملت جعفریہ ملک بھر خصوصا پاراچنار، کوئٹہ اور ڈیر ہ اسمعٰیل خان میں لاشیں اٹھار ہی ہے۔مگربے حس حکومت سے ابھی تک دہشت گردوں کا نیٹ ورک نہیں توڑا جاسکا۔