• مفتی رفیع عثمانی کی وفات سے علمی حلقوں میں خلاء پیدا ہوا علامہ شبیر حسن میثمی
  • مسئول شعبہ خدمت زائرین ناصر انقلابی کا دورہ پاکستان
  • علامہ عارف واحدی کا سید وزارت حسین نقوی اور شہید انور علی آخوندزادہ کو خراجِ تحسین / دونوں عظیم شخصیات قومی سرمایہ تھیں
  • علامہ شبیر میثمی کی وفد کے ہمراہ علامہ افتخار نقوی سے ملاقات
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے وفد کی مفتی رفیع عثمانی کے فرزند سے والد کی تعزیت
  • سید ذیشان حیدر بخاری متحدہ طلباء محاذ کے مرکزی جنرل سیکرٹری منتخب ہوئے ۔
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے اعلی سطحی وفد کی پرنسپل سیکرٹری وزیر اعظم پاکستان سے تعزیت
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کی نواب شاہ میں پریس کانفرنس
  • اپنے تنظیمی نظام اور سسٹم کو مضبوط سے مضبوط کرنے کی اشد ضرورت ہے۔ ورکر کنونشن
  • مفتی رفیع عثمانی کی وفات علمی حلقوں میں خلا مشکل سے پُر ہوگا علامہ شبیر میثمی

تازه خبریں

سانحہ راولپنڈی کے بعد سانحہ ملتان،پاکستان کے حالات کو خراب کرنے کی ایک سوچی سمجھی سازش ہے . ساجد علی ثمر،مرکزی صدر جے ایس او پاکستان

جعفریہ پریس – ابھی راولپنڈی میں ہوئے افسوسناک سانحہ پر پورا ملک سوگوار تھا اور اس کے ذمہ داروں کا تعین کیا جارہا تھا کہ اسی دوران سانحہ ملتان برپا ہو گیا۔یوں محسوس ہو رہا ہے کہ اس وقت انتظامی ادارے پوری طرح بے بس ہو چکے ہیں اور ان کے پاس سوائے ہاتھ پر ہاتھ رکھنے کے علاوہ اور کوئی چارہ نہیں رہا۔ان خیالات کا اظہار جے ایس او کے مرکزی صدر ساجد علی ثمر نے کیا۔
ان کا کہنا تھا کہ پنجاب ہمیشہ سے ایک پر امن صوبہ رہا ہے اور اس میں جلوس ہائے عزاداری ہمیشہ سے ہی پر امن طریقے سے برپا ہوتے رہے ہیں۔ شائد یہی بات دشمنوں کی نظر میں کھٹک رہی تھی۔لہٰذا اس سال انہوں نے انتظامیہ کی غفلت سے بھرپور فائدہ اٹھایا اور پنجاب کے پر امن حالات کو انتہائی دگرگوں حالات کی طرف لے جایا جارہا ہے۔پہلے راولپنڈی کا عظیم سانحہ رونما ہوا ۔اس سانحہ کے زخم ابھی مندمل نہ ہو پائے تھے اور سارا پاکستان اس سانحہ پر سوگوار تھا کہ ملتان میں بھی حالات خرابی کی طرف چل پڑے۔
انہوں نے کہا کہ اس نازک صورتحال میں تمام پاکستانیوں سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ پر امن رہیں ۔جے ایس او کے جوان خود بھی پر امن رہیں اور اپنے اپنے علاقوں میں عوام کو پر امن رکھیں،عوام تک حقائق پہنچائیں اور ان کو شعور اور آگاہی دیں۔ہم نے ایک ذمہ دار شہری ہونے کا ثبوت دینا ہے۔کہیں ایسا نہ ہو کہ ہم بھی دشمن کی اس سازش کا حصہ بن جائیں۔اپنی آنکھیں کھلی رکھیں اور کسی بھی قسم کی قومی املاک کو نہ خود نقصان پہنچائیں اور نہ ہی کسی کو نقصان پہنچانے دیں۔