• کوئٹہ میں ہونے والی دہشتگردی کی مذمت کرتے ہیں شیعہ علماء کونسل پاکستان
  • علامہ شبیر حسن میثمی کا علامہ سید علی حسین مدنی کے کتابخانہ کا دورہ
  • مفتی رفیع عثمانی کی وفات سے علمی حلقوں میں خلاء پیدا ہوا علامہ شبیر حسن میثمی
  • مسئول شعبہ خدمت زائرین ناصر انقلابی کا دورہ پاکستان
  • علامہ عارف واحدی کا سید وزارت حسین نقوی اور شہید انور علی آخوندزادہ کو خراجِ تحسین / دونوں عظیم شخصیات قومی سرمایہ تھیں
  • علامہ شبیر میثمی کی وفد کے ہمراہ علامہ افتخار نقوی سے ملاقات
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے وفد کی مفتی رفیع عثمانی کے فرزند سے والد کی تعزیت
  • سید ذیشان حیدر بخاری متحدہ طلباء محاذ کے مرکزی جنرل سیکرٹری منتخب ہوئے ۔
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے اعلی سطحی وفد کی پرنسپل سیکرٹری وزیر اعظم پاکستان سے تعزیت
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کی نواب شاہ میں پریس کانفرنس

تازه خبریں

شہید قائد علامہ عارف حسین الحسینی کی زندگی بر صغیر پاک و ہند بالخصوص پاکستان کے مسلمانوں کے اتحاد کی مقدس جدوجہدسے عبارت تھی۔

جعفریہ پریس  ڈیرہ اسماعیل خان( )شیعہ علماء پاکستان خیبر پختونخواہ کے سربراہ علامہ محمد رمضان توقیر نے شہید علامہ عارف حسین الحسینی کی عالم اسلام کے اتحاد کیلئے گراں قدر خدمات کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے ۔انکی زندگی کو مسلم رہنماؤں کیلئے مشعل راہ اور نمونہ حیات قرار دیا ہے۔جامعتہ النجف کوٹلی امام حسین ؑ ڈیرہ اسماعیل خان میں داعی اتحاد بین المسلمین اور عالم اسلام کے عظیم رہنماء شہید قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید عارف حسین الحسینی کی 26ویں برسی کے موقع پر منعقدہ تقریب میں شریک طلباء اور جوانوں سے خطاب کرتے ہوئے علامہ محمد رمضان توقیر نے کہا کہ شہید قائد علامہ عارف حسین الحسینی کی زندگی بر صغیر پاک و ہند بالخصوص پاکستان کے مسلمانوں کے اتحاد کی مقدس جدوجہدسے عبارت تھی۔
انہوں نے عالم اسلام کے تمام فقہا کے مابین اتحاد واتفاق اور روشن جدوجہد کی بنیاد ڈالی جس کی بنا پروطن عزیز کی سرحدیں پار کر کے برصیغر اور دنیا کے دیگر اسلامی ممالک میں ایک سوچ کی مانند فرقہ واریت اور نفاق کے بیج کو جڑ سے اکھاڑپھنیکنے میں جت گئیں۔اور دنیا بھر میں امت مسلمہ میں اتحادو اتفاق اور محبت ویگانگت کا مثالی اور مقدس جذبہ پروان چڑنے لگا۔جبکہ عالمی طاغوتی اور سامراجی طاقتوں کے خلاف دنیا میں مظلوم اور پسی عوام کو حوصلہ بھی ملا کہ اپنے حقوق کیلئے ڈٹ جائیں۔اور یہی بات عالمی استعماری طاقتوں کو گوارا نا تھی۔جنہوں نے 5اگست1988 ؁ء کو اپنے پروردوں اور اہلکاروں کے ذریعے عالم اسلام کے اس عظیم رہنماء اور داعی اتحاد بین المسلمین قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سیدعارف حسین الحسینی کو شہید کر دیا۔
علامہ محمد رمضان توقیر نے شہید قائد کی زندگی کو بلا تحصیص اہل اسلام کی تمام متقدر رہنماؤں کے لئے مشعل راہ اور مثالی نمونہ حیات قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ شہید قائد کی سوچ و فکر پرکاربند ہو کر اتحاد بین المسلمین کو فروغ اور اہل اسلام کو عالمی استعمار اور طاغوتی قوتوں کے مقابل کھڑا ہونے کے قابل بنایا۔