• علامہ رمضان توقیر سے علامہ آصف حسینی کی ملاقات
  • علامہ عارف حسین واحدی سے علماء کے وفد کی ملاقات
  • حساس نوعیت کے فیصلے پر سپریم کورٹ مزیدوضاحت جاری کرے ترجمان قائد ملت جعفریہ پاکستان
  • علامہ شبیر میثمی کی زیر صدارت یوم القد س کے انعقاد بارے مشاورتی اجلاس منعقد
  • برسی شہدائے سیہون شریف کا چھٹا اجتماع ہزاروں افراد شریک
  • اعلامیہ اسلامی تحریک پاکستان برائے عام انتخابات 2024
  • ھیئت آئمہ مساجد و علمائے امامیہ پاکستان کی جانب سے مجلس ترحیم
  • اسلامی تحریک پاکستان کے سیاسی سیل کا اجلاس اسلام آباد میں منعقد ہوا
  • مولانا امداد گھلو شیعہ علماء کونسل پاکستان جنوبی پنجاب کے صدر منتخب
  • اسلامی تحریک پاکستان کے زیر اہتمام فلسطین و کشمیر کانفرنس

تازه خبریں

شیعہ علماء کونسل پاکستان کے وفد کی ایرانی سفیر محمد علی حسینی سے ملاقات

شیعہ علماء کونسل کے ایک اعلیٰ سطحی وفد نے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ ڈاکٹر شبیر حسن میثمی کی سربراہی میں اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر سید محمد علی حسینی سے ملاقات کی۔ وفد میں شیعہ علماء کونسل پاکستان کے مرکزی نائب صدرو علامہ عارف حسین واحدی، علامہ مظہر عباس علوی اور مرکزی سیکرٹری اطلاعات زاہد علی آخونزادہ شامل تھے۔ وفد نے مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا۔ اس موقع پر وفد نے ایرانی سفیر کو زائرین کے مسائل سے مفصل طور پر آگاہ کیا اور زائرین کے مسائل کے فوری حل کی گذارش کی۔ وفد نے بتایا کہ ویزہ میں تاخیر سے اربعین میں زائرین مشکلات کا شکار رہے اور اب بھی سرحدات پر زائرین کی ایک بڑی تعداد وطن واپسی اور ایران داخلے کی مشکلات سے دوچار ہے۔ انہوں نے ان  مشکلات کی تفصیلات سے سفیر محترم کو آگاہ کیا۔ جبکہ وفد نے ایرانی یونیورسٹیوں میں تعلیم حاصل کرنے والے طالب علموں کی اسناد کو پاکستان کی یونیورسٹیز میں بھی متوازی بنانے کے لیے اقدامات کرنے کی اپیل کی۔ اس موقع پر اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر سید محمد علی حسینی نے کہا کہ پاکستان اور ایران کے بہترین دوستانہ و برادرانہ تعلقات کی بنا پر پاکستانی زائرین کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا دونوں ہمسایہ ممالک میں ثقافتی، مذہبی، عوامی، دوستانہ اور برادرانہ مظبوط روابط قائم ہیں۔ اس موقع پر انہوں نے آئندہ اربعین کے حوالے سے زائرین کے مسائل کے حل اور ویزہ پالیسی کو پاکستانی زاہرین کے لیے آسان بنانے سے متعلق بھی اقدامات کرنے کا یقین دلایا جبکہ انہوں نے کہا کہ پاکستانی طالب علموں  کے لیے تعلیمی مواقع کو بھی آسان بنایا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ یونیورسٹیز کے ان طالب علموں کی اسناد کو بھی پاکستانی یونیورسٹیوں میں متوازی حثیت دلانے کے لیے اقدامات کیے جا رہے ہیں اور اس معاملے کو بھی جلد حل کر لیا جائے گا ۔