• علامہ رمضان توقیر سے علامہ آصف حسینی کی ملاقات
  • علامہ عارف حسین واحدی سے علماء کے وفد کی ملاقات
  • حساس نوعیت کے فیصلے پر سپریم کورٹ مزیدوضاحت جاری کرے ترجمان قائد ملت جعفریہ پاکستان
  • علامہ شبیر میثمی کی زیر صدارت یوم القد س کے انعقاد بارے مشاورتی اجلاس منعقد
  • برسی شہدائے سیہون شریف کا چھٹا اجتماع ہزاروں افراد شریک
  • اعلامیہ اسلامی تحریک پاکستان برائے عام انتخابات 2024
  • ھیئت آئمہ مساجد و علمائے امامیہ پاکستان کی جانب سے مجلس ترحیم
  • اسلامی تحریک پاکستان کے سیاسی سیل کا اجلاس اسلام آباد میں منعقد ہوا
  • مولانا امداد گھلو شیعہ علماء کونسل پاکستان جنوبی پنجاب کے صدر منتخب
  • اسلامی تحریک پاکستان کے زیر اہتمام فلسطین و کشمیر کانفرنس

تازه خبریں

فلسطینی ، استقامت، صبر و حوصلے نے صیہونیت اور اسکے غرو ر کو خاک میں ملادیا

فلسطینی ، استقامت، صبر و حوصلے نے صیہونیت اور اسکے غرو ر کو خاک میں ملادیا

فلسطینی ، استقامت، صبر و حوصلے نے صیہونیت اور اسکے غرو ر کو خاک میں ملادیا،قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد نقوی
  جس اتحادکا مظاہرہ غزہ جنگ میں کیاگیا ظلم و استعماریت کے خاتمے کیلئے بھی اسی انسانی اتحاد کی اشد ضرورت ہے، قائد ملت جعفریہ پاکستان
اسلام آباد/راولپنڈی24 نومبر2023ء (جعفریہ پریس پاکستان )قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی نے غزہ جنگ بندی دراصل صیہونیت کی طاقت کے گٹنے ٹیکنے اور اس کا غرور خاک میں ملنے کا مظہر ہے، فلسطین کے اصل وارثوں نے پونے دو ماہ جس استقامت اور صبر و حوصلے کا مظاہرہ کیا وہ مظلوموں کی جیت اور ظالم صہیونیت کی زمیں بوسی ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوںنے غزہ کی عارضی جنگ بندی پر تبصرہ کرتے ہوئے کیا۔ قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی نے کہاکہ 7 اکتوبر2023ء کے روز سے آج تک فلسطینی عوام نے جس قربانی و سرشاری اور اپنی سرزمین سے محبت کے جذبے کیساتھ انبیاء کی سرزمین کا دفاع کیا اوراپنے آپ کو نام نہاد سپر پاور کہلانے والی استعماری و صہیونی طاقتوں کو جس طرح پچھاڑا اور رسوا کیاوہ واضح کررہاہے کہ قابض طاقتیں ایک مکڑی کے جالے سے بھی کمزور ہیں، جس اتحاد کا مظاہرہ غزہ کی جنگ میں کیا گیا۔ظلم و استعماریت کے خاتمے کیلئے اسی انسانی اتحاد کی اشد ضرورت ہے۔

قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی نے کہاکہ عارضی جنگ بندی دراصل استعماری صہیونی شیطانی طاقتوں کی شکست فاش اور ان کے طاقت کے نشے میں غرور کو خاک آلود کرنے کے مترادف ہے ۔ قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی نے اس جنگ میں شہداء کے ورثاء سے گہرے دکھ اور تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ ایک عظیم و مقدس مقصد بیت المقدس کی آزادی ،انبیاء کی سرزمین کے دفاع اور اپنی مادروطن کیلئے جانیں قربان کرنیوالوں کی قربانیاں ہمیشہ یاد رکھی جاتی ہیں، پاکستانی قوم اپنے مظلوم فلسطینی بھائیوں کے غم میں برابر کے شریک ہیں اور ان کی انسانی اور اسلامی بنیادوں پر حمایت جاری رہے گی ۔

انہوںنے ایک مرتبہ پھر موقف کا اعادہ کرتے ہوئے کہاکہ مسئلہ فلسطین اساس پاکستان ہے کہ 23 مارچ 1940ء کو قرارداد پاکستان اور قرارداد فلسطین کا ایک ساتھ منظور ہوا واضح کرتاہے کہ فلسطین صرف فلسطینی عوام کا ہے اور قابض صہیونی ریاست کا وجودباطل ہے ۔