• تعلیم یافتہ نسل ، ملک و قوم کی ترقی کی ضمانت ہے، علامہ ڈاکٹر شبیرحسن میثمی
  • کوئٹہ میں ہونے والی دہشتگردی کی مذمت کرتے ہیں شیعہ علماء کونسل پاکستان
  • علامہ شبیر حسن میثمی کا علامہ سید علی حسین مدنی کے کتابخانہ کا دورہ
  • مفتی رفیع عثمانی کی وفات سے علمی حلقوں میں خلاء پیدا ہوا علامہ شبیر حسن میثمی
  • مسئول شعبہ خدمت زائرین ناصر انقلابی کا دورہ پاکستان
  • علامہ عارف واحدی کا سید وزارت حسین نقوی اور شہید انور علی آخوندزادہ کو خراجِ تحسین / دونوں عظیم شخصیات قومی سرمایہ تھیں
  • علامہ شبیر میثمی کی وفد کے ہمراہ علامہ افتخار نقوی سے ملاقات
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے وفد کی مفتی رفیع عثمانی کے فرزند سے والد کی تعزیت
  • سید ذیشان حیدر بخاری متحدہ طلباء محاذ کے مرکزی جنرل سیکرٹری منتخب ہوئے ۔
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے اعلی سطحی وفد کی پرنسپل سیکرٹری وزیر اعظم پاکستان سے تعزیت

تازه خبریں

مختلف مذاہب کے پیروکار مسلمانوں کا خون بہانا، فرقہ واریت پھیلانا اور مسلمانوں میں اختلاف ڈالنا ممنوع ہے،اسلامی فقہ کونسل

جعفریہ پریس – سعودی عرب  (جدہ) میں قائم بین الاقوامی اسلامی فقہ کونسل نے اپنے ایک بیان میں اعلان کیا ہے کہ مختلف اسلامی مسالک کے پیروکاروں کو کافر قرار دینا حرام ہے۔  ذرائع  کے مطابق سعودی عرب (جدہ) میں قائم بین الاقوامی اسلامی فقہ کونسل نے اپنے اکیسویں اجلاس میں یہ بات زور دے کر کہی ہے کہ کسی بھی اسلامی مسلک کے ماننے والے یا کسی بھی اسلامی فرقہ سے تعلق رکھنے والے افراد کو کافر قرار دینا حرام ہے۔ اجلاس میں گفتگو بین الادیان کے موضوع کو زیر بحث لاتے ہوئے تمام اسلامی مسالک کے نزدیک ازواج و اصحاب رسولﷺ کے احترام اور ان کی عدم توہین کے وجوب پر بھی زور دیا گیا۔ اجلاس کے شرکاء نے مختلف اسلامی مسالک اور فرقوں کی تکفیر کو حرام قرار دیا اور اعلان کیا کہ اس بنیاد پر جو بھی شخص اسلامی اصولوں پر یقین رکھتا اور دین کا انکار نہ کرتا ہو اس کا احترام ضروری ہے اوراسے کافر کہنا صحیح نہیں ہے۔ کونسل نے اعلان کیا کہ اسی طرح مختلف مذاہب کے پیروکار مسلمانوں کا خون بہانا، فرقہ واریت پھیلانا اور مسلمانوں میں تفرقہ اور اختلاف پھیلانا بھی ممنوع ہے۔ واضح ر ہے کہ ولی امر مسلمین حضرت آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای اور سیستانی سمیت دیگر شیعہ مراجع تقلید پہلے سے ہی اہلسنت مقدسات کی توہین حرام ہونے کا فتوی دیتے آئے ہیں۔