• تعلیم یافتہ نسل ، ملک و قوم کی ترقی کی ضمانت ہے، علامہ ڈاکٹر شبیرحسن میثمی
  • کوئٹہ میں ہونے والی دہشتگردی کی مذمت کرتے ہیں شیعہ علماء کونسل پاکستان
  • علامہ شبیر حسن میثمی کا علامہ سید علی حسین مدنی کے کتابخانہ کا دورہ
  • مفتی رفیع عثمانی کی وفات سے علمی حلقوں میں خلاء پیدا ہوا علامہ شبیر حسن میثمی
  • مسئول شعبہ خدمت زائرین ناصر انقلابی کا دورہ پاکستان
  • علامہ عارف واحدی کا سید وزارت حسین نقوی اور شہید انور علی آخوندزادہ کو خراجِ تحسین / دونوں عظیم شخصیات قومی سرمایہ تھیں
  • علامہ شبیر میثمی کی وفد کے ہمراہ علامہ افتخار نقوی سے ملاقات
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے وفد کی مفتی رفیع عثمانی کے فرزند سے والد کی تعزیت
  • سید ذیشان حیدر بخاری متحدہ طلباء محاذ کے مرکزی جنرل سیکرٹری منتخب ہوئے ۔
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے اعلی سطحی وفد کی پرنسپل سیکرٹری وزیر اعظم پاکستان سے تعزیت

تازه خبریں

مذاکرات یا آپریشن کا شورمچانے والے ملت تشیع کیخلاف قتل غارتگری میں ملوث تکفیری دہشتگردعناصرکیخلاف کیوں آپریشن کی بات نہیں کرتے،علامہ ناظر عبّاس تقوی

جعفریہ پریس –  شیعہ علماء کونسل پاکستان شعبہ خواتین کراچی کے تحت شیعہ ٹارگٹ کلنگ کیخلاف احتجاجی ریلی کا انعقاد کیا گیا- شرکاء ریلی سے شیعہ علما کونسل پاکستان  سندھ کے صوبائی سکریٹری جنرل علامہ ناظر عبّاس تقوی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کراچی کو دہشت گردوں نے لہو لہان کردیا ہے آئے روز ہمارے ڈاکٹرز، انجینیرز، وکلاء اور سرمایہ دار سمیت ہر طبقے کے بیگناہ لوگوں کو نشانہ بنایا جا رہا ہے – انہوں نے کہا کہ فرقہ واریت کے نام پر پاکستان میں ابتک جتنی دہشتگردی ہوئی ہے ، ماضی میں وہ یہ کام پس پردہ کرتے تھے لیکن اس بار سعودی عرب کھل کر بے نقاب ہو چکا ہے، آج صرف اہل تشیع ہی نہیں بلکہ تمام مکاتب فکر و مسالک بھی یہ کہہ رہے ہیں کہ سعودی عرب پاکستان میں فرقہ وارانہ فسادات کرانا چاہتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی حکمرانوں کو چاہئیے کہ ملک میں انتشار پھیلانے کا سبب بننے والی ایسی کسی قسم کی امداد لینے سے گریز کریں کیونکہ حکمرانوں کی ذمہ داری ہے کہ وہ عوام کی جان و مال اور عزت و آبرو کا تحفظ یقینی بنائیں۔
علامہ ناظر عبّاس تقوی نے کہا کہ اس سعودی امداد اور پھر اپنے لوگوں کو بیرون ملک بھیجنے سے دنیا بھر میں یہ تاثر جا رہا ہے کہ پاکستان میں دہشتگردوں کی فیکٹریاں لگی ہوئی ہیں، جس ملک کو چاہئیے وہ ہم سے خرید لے اور ہم پاکستان کے اندر سے دہشتگردوں کو آپریٹ کرنے کیلئے تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان اقدامات سے پاکستان کا عالم اسلام میں تشخص خراب ہو رہا ہے، لہٰذا حکمرانوں کو چاہئیے کہ پاکستان کو ان معاملات سے باہر نکالیں اور ایک مثالی ملک بنائیں۔انہوں نے کہا کہ ملک کے اندر اب تو صحافی بھی محفوظ نہیں ہیں – شیعہ علما کونسل سندھ کے صوبائی سکریٹری جنرل نے کہا کہ ہم حامد میر پر قاتلانہ حملہ کے بھرپورمذمت کرتے ہیں اور حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ شہدا کے قاتلوں کو فی الفور گرفتار کرکے قرار واقعی سزا دیں –
شیعہ علما کونسل پاکستان  سندھ کے صوبائی سکریٹری جنرل علامہ ناظر عبّاس تقوی  نے کہا کہ  آج پاکستان میں شور مچایا جا رہا ہے کہ فلاں گروہ سے مذاکرات ہونے چاہئیے فلاں سے نہیں، لیکن جو پاکستان میں براہ راست گلی کوچوں کے اندر ملت تشیع کیخلاف قتل و غارتگری میں جو تکفیری دہشتگرد عناصر ملوث ہیں، ان کیخلاف ابتک کسی نے بھی آپریشن کی بات نہیں کی ہے، میں حکومت سے مطالبہ کرتا ہوں کہ اصل اقدامات ان دہشتگردوں کیخلاف کئے جائیں تاکہ پاکستان میں تشیع کے حقوق اور جان و مال کا تحفظ کیا جا سکے۔ اگر ہمارے مطالبات پر توجہ نہ دی گئی اور ہمارے قاتلوں کو گرفتار نہیں کیا گیا تو ہم عنقریب وزیر اعلیٰ ہاوس کے گھیراؤ کی کال دیں گے ۔