• تعلیم یافتہ نسل ، ملک و قوم کی ترقی کی ضمانت ہے، علامہ ڈاکٹر شبیرحسن میثمی
  • کوئٹہ میں ہونے والی دہشتگردی کی مذمت کرتے ہیں شیعہ علماء کونسل پاکستان
  • علامہ شبیر حسن میثمی کا علامہ سید علی حسین مدنی کے کتابخانہ کا دورہ
  • مفتی رفیع عثمانی کی وفات سے علمی حلقوں میں خلاء پیدا ہوا علامہ شبیر حسن میثمی
  • مسئول شعبہ خدمت زائرین ناصر انقلابی کا دورہ پاکستان
  • علامہ عارف واحدی کا سید وزارت حسین نقوی اور شہید انور علی آخوندزادہ کو خراجِ تحسین / دونوں عظیم شخصیات قومی سرمایہ تھیں
  • علامہ شبیر میثمی کی وفد کے ہمراہ علامہ افتخار نقوی سے ملاقات
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے وفد کی مفتی رفیع عثمانی کے فرزند سے والد کی تعزیت
  • سید ذیشان حیدر بخاری متحدہ طلباء محاذ کے مرکزی جنرل سیکرٹری منتخب ہوئے ۔
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے اعلی سطحی وفد کی پرنسپل سیکرٹری وزیر اعظم پاکستان سے تعزیت

تازه خبریں

ملک سے دہشت گردوں کا خاتمہ اورامن وامان بحال کرنا ریاست کی ذمہ داری ہے،قائد ملت جعفریہ پاکستان

جعفریہ پریس- قائد ملت جعفریہ پاکستان حضرت آیت اللہ علامہ سید ساجد علی نقوی  نے سکرنڈ میں مقامی رہنما اﷲ بخش جعفری کی رہائش گاہ پرصحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہےکہ موجودہ حکومت میں کچھ روشنی کی کرنیں محسوس ہوئی تھیں کہ سابق حکومت سے کچھ بہتر ہو گا لیکن وقت کے ساتھ ساتھ وہ کرنیں بھی ماند پڑتی نظر آ رہی ہیں ،دہشت گردی اور امن و امان کا مسئلہ سزا پر عمل درآمد نہ ہونے کی وجہ سے بڑھتا جا رہا ہے، اگر 2008 سے ہی سزا کے قانون پر عمل درآمد ہوجاتا تو آج یہ کیفیت نہ ہوتی، انہوں نے کہا کہ حکمران سابق ہوں یا موجودہ عوام کو حقائق سے بے خبر رکھا جا رہا ہے،کراچی میں ہائی کمان کی میٹنگ ہونے کے باوجود نتائج کا نہ نکلنا ایک سوالیہ نشان ہے، کراچی میں اتنی زیادہ وارداتوں کے باوجود ملزمان کا نہ پکڑا جانا یا سزا نہ ملنا بھی امن و امان میں خلل کا باعث ہے، انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ طالبان سے مذاکرات کی ٹیم کی سچائی اور ذمے داری پر تو میں گفتگو نہیں کروں گا لیکن اتنا ضرور کہوں گا کہ ملک سے دہشت گردوں کا خاتمہ اور امن و امان بحال کرنا ریاست کی ذمہ داری ہے، ہمیں مذاکرات کےنتائج کا انتظار ہے، اگر نتائج نہ نکلے اور ریاست نے بھی کچھ نہ کیا تو کوئی لائحہ عمل بنائیں گے کیونکہ دہشت گردی نے ملک کو کھوکھلا کر ڈالا ہے جس کی وجہ سے پاکستان کے عوام شش و پنج میں مبتلا ہیں، اس موقع پر مرکزی رہنما سید عمران عباس کاظمی، سید جعفر نقوی، سید اظہار بخارری بھی انکے ہمراہ موجود تھے۔ بعد ازاں انہوں نے جعفریہ یوتھ کونسل کے صوبائی کنونشن سے بھی خطاب کیا جبکہ اس سے قبل جامعہ مسجد مصطفیٰ کا سنگ بنیاد رکھا گیا۔