• ٹیکسز کی بھر مار کا بجٹ، عوام سے محبت نہیں دشمنی کےمترادف ہے
  • مالی سال 2024-25 کے تعلیمی بجٹ پر نظر ثانی کا مطالبہ کرتے ہیں۔ مرکزی صدر جے ایس او پاکستان
  • امام خمینی کی برسی پر علامہ شبیر حسن میثمی کا پیغام
  • پاک ایران بارڈر پر پھنسے زائرین کا مسئلہ فوری حل کیا جائے شیعہ علماء کونسل پاکستان
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان سندھ کی نو منتخب کابینہ کی حلف برداری
  • ڈاکٹر سید ابراہیم رئیسی اور ان کے ساتھیوں کی شہادت عالم اسلام کے لئے بہت بڑا دھچکا ہے
  • ٹیلی کمیونی کیشن اتھارٹی اشتہار ناکافی ہے امن و امان کو تہہ و بالا کرنیوالوں کو نظراندازکردیاگیا
  • جعفریہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کی مرکزی کابینہ کا اعلان کردیا گیا
  • علامہ شبیر حسن میثمی کی ایرانی صدر سید ابراہیم رئیسی اور ان کے رفقاء کی شہادت پر تعزیت
  • علامہ عارف حسین واحدی نے گورنر پنجاب سردار سلیم حیدر خان سے ملاقات کی

تازه خبریں

شہید عارف الحسینی اتحادبین المسلمین اور عوامی حقوق کے تحفظ کے علمبردار کے طور پر ہمیشہ یاد رکھے جائینگے

قائد شہید عارف حسین الحسینی ہمہ جہت شخصیت کے مالک تھے قائد ملت جعفریہ پاکستان

 قائد شہید عارف حسین الحسینی ہمہ جہت شخصیت کے مالک تھے، قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ ساجد نقوی
 قائد شہید نے عالمی استعمار کی سازشوں اور طاغوتی چیرہ دستیوں کیخلاف اور محروم و مظلوم  طبقات کے حقوق کیلئے مسلسل جدوجہد کی، قائد ملت جعفریہ
  طاقت اور جبر کے زور پر کسی قوم کو دبایا نہیں جاسکتا، مودی غیر کشمیریوں کو مقبوضہ کشمیر میں بسا کر مسلم اکثریت کو ختم کرناچاہتا ہے کامیاب نہیں ہوگا

راولپنڈی/اسلام آباد 4  اگست  2023 ء (جعفریہ پریس پاکستان)قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی نے کہا ہے کہ قائد شہید علامہ سید عارف حسین الحسینی ہمہ جہت شخصیت کے مالک تھے، اصول و نظریات ان کی شخصیت کا اہم اور نمایاں پہلو تھا اس وجہ سے وہ بہت کم وقت میں نہ صرف پاکستان بلکہ عالمی سطح پر ایک بہترین رہنما کے طور پر ُابھرے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے شہید قائد کی 35ویں برسی کے موقع پر اپنے پیغام میں کیا5   اگست تاریخ کا سیاہ ترین دن ہے جس دن علامہ عارف حسین الحسینی کو گولیوں کا نشانہ بناکر شہید کردیا گیا ۔ انہوں نے ایک نئی سوچ اور فکر دی اور نئی طرح ڈالی انہوں نے مظلوموں اور محکوموں کے لئے آواز بلند کی اور اتحاد و وحدت کے لئے گرانقدر خدمات سرانجام دیں۔ ہم آج بھی اسی فکر سے استفادہ کر سکتے ہیں ،مثبت اہداف کی خاطر وجود میں آنے والا یہ کارواں رواں دواں ہے۔علامہ ساجد نقوی نے مزید کہا کہ قائد شہید نے عالمی استعمار کی سازشوں اور طاغوتی چیرہ دستیوں کے خلاف اور محروم و مظلوم  طبقات کے حقوق کے لئے مسلسل جدوجہد کی  اور بالخصوص پاکستان میں بیرونی سازشوں کا بروقت ادراک کر کے ان کے خلاف عملی جدوجہد کر نے کی طرح ڈالی ۔ بیرونی سارشوں کے علاوہ پاکستانی عوام کو درپیش اندرونی سارشوں کو بے نقاب کرنے اور عوامی مشکلات کے حل کے لیے مخلصانہ کاوش بھی شہید حسینی کا خاصہ ہے۔  علامہ ساجد نقوی نے کہا کہ قائد شہید نے مارشل لاء دور میں جہاں عوام کو ان کے حقوق کا شعور دیا وہاں ہر مکتب کے عوام کو اتحاد و وحدت اور ہم آہنگی کا درس دیا اور  پاکستان کے مسلمانوں کو ایک لڑی میں پرونے کی بھرپور کو شش کی آج یقینا اتحادووحدت سے ان کی روح شادمان ہوگی۔قائد ملت جعفریہ پاکستان نے یہ بات زور دے کر کہی کہ شہید کے پیروکاروں کو چاہیے کہ وہ شہید قائد کی شخصیت کا روشن فکری کے ساتھ مطالعہ کریں اور ان کے نقش قدم پر چلتے ہوئے پاکستان میں عادلانہ نظام کے قیام، محروم و مظلوم طبقات کو درپیش مسائل کے حل، ً فرقہ واریت کے خاتمے’ طبقاتی تقسیم ‘بد عنوانی’ بے راہ روی اورمعاشرتی مسائل کے حل کے لیے جدوجہد کریں۔دوسری جانب قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی نے کہاکہ 5 اگست 2019ء کو بھارت نے مقبوضہ کشمیر پر ایک اور کاری وار کیا اور آرٹیکل 370 اور دفعہ 35 اے کو کالعدم قرار دیتے ہوئے کشمیرکی خصوصی حیثیت ختم کرکے عوام کی بنیادی ، آئینی اور بین الاقوامی حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں کیں مگر یہ واضح رہے کہ طاقت اور جبر کے زور پر کسی قوم کو دبایا نہیں جاسکتا، مودی اور قابض ریاست کا بنیادی مقصد غیر کشمیریوں کو مقبوضہ کشمیر میں بسا کر مسلم اکثریت کو ختم کرنا ہے جس میں کبھی وہ کامیاب نہیں ہوگا۔ بھارت عالمی انسانی حقوق اور بنیادی آئینی حقوق کی مزید دھجیاں اڑانے کی بجائے ان اقدامات کو واپس لے ۔