• علامہ رمضان توقیر سے علامہ آصف حسینی کی ملاقات
  • علامہ عارف حسین واحدی سے علماء کے وفد کی ملاقات
  • حساس نوعیت کے فیصلے پر سپریم کورٹ مزیدوضاحت جاری کرے ترجمان قائد ملت جعفریہ پاکستان
  • علامہ شبیر میثمی کی زیر صدارت یوم القد س کے انعقاد بارے مشاورتی اجلاس منعقد
  • برسی شہدائے سیہون شریف کا چھٹا اجتماع ہزاروں افراد شریک
  • اعلامیہ اسلامی تحریک پاکستان برائے عام انتخابات 2024
  • ھیئت آئمہ مساجد و علمائے امامیہ پاکستان کی جانب سے مجلس ترحیم
  • اسلامی تحریک پاکستان کے سیاسی سیل کا اجلاس اسلام آباد میں منعقد ہوا
  • مولانا امداد گھلو شیعہ علماء کونسل پاکستان جنوبی پنجاب کے صدر منتخب
  • اسلامی تحریک پاکستان کے زیر اہتمام فلسطین و کشمیر کانفرنس

تازه خبریں

ملی یکجہتی کونسل کا اہم سربراہی اجلاس – 15 اپریل کوا سلام آباد میں عالمی اتحاد امت کانفرنس کا انعقاد کیا جائے گا

جعفریہ پریس – اسلام آباد میں صاحبزادہ ابو الخیر محمد زبیر کی زیر صدارت ملی یکجہتی کونسل کا اجلاس منعقد ہوا ۔ جس میں کونسل مرکزی سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ، اسلامی تحریک پاکستان کے مرکزی پاکستان سیکرٹر ی جنرل وکونسل کے رہنما علامہ عارف حسین واحدی ، کونسل کے ڈپٹی سیکرٹر ی جنرل ثاقب اکبرسمیت علامہ سید نیازحسین نقوی، پروفیسر محمد ابراہیم ، عبدالرشید ترابی، قاضی ظفرالحق، سردار محمد خان لغاری،مولانا عبد المالک،ڈاکٹر عابد رؤف،مفتی گلزار احمد نعیمی،مولانا امین شہیدی، سید عاشق حسین شاہ بخاری،میاں عامر طفیل،ڈاکٹر امتیاز احمد،قاری ابرار حسین قادری اور نورالمصطفیٰ نورانی نے شرکت کی۔ ملی یکجہتی کونسل پاکستان کے صدر صاحبزادہ ابوالخیر محمد زبیر نے کہا کہ اس وقت دشمن قوتیں عالم اسلام کے خلاف برسرپیکار ہیں۔ دشمن کے ان ہتھکنڈوں کو ناکام بنانے کے لئے اتحاد امت وقت کی اہم ضرورت ہے۔ لیاقت بلوچ نے اس موقع پر کہا کہ جلد صوبائی تنظیمات کا اجلاس بلا کر ملی یکجہتی کونسل کو ملک بھر میں فعال کیا جائے گا۔ سربراہی اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ 15 اپریل کوا سلام آباد میں عالمی اتحاد امت کانفرنس کا انعقاد کیا جائے گا۔ اجلاس میں فیصلہ ہوا کہ تمام دینی جماعتوں کے سربراہوں، تنظیمات مدارس دینیہ کے سربراہوں اور مذہبی سکالرز کو اتحاد امت کانفرنس میں خصوصی طور پر مدعو کیا جائے گا۔ اس سلسلہ میں محمد اسلم کی سربراہی میں مختلف انتظامی کمیٹیاں بھی تشکیل دے دی گئی ہیں۔ اجلاس میں ملی یکجہتی کونسل کی تنظیم سازی کا سلسلہ پورے ملک تک پھیلانے کے لئے تجاویر و آراء لی گئیں ۔