• مفتی رفیع عثمانی کی وفات سے علمی حلقوں میں خلاء پیدا ہوا علامہ شبیر حسن میثمی
  • مسئول شعبہ خدمت زائرین ناصر انقلابی کا دورہ پاکستان
  • علامہ عارف واحدی کا سید وزارت حسین نقوی اور شہید انور علی آخوندزادہ کو خراجِ تحسین / دونوں عظیم شخصیات قومی سرمایہ تھیں
  • علامہ شبیر میثمی کی وفد کے ہمراہ علامہ افتخار نقوی سے ملاقات
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے وفد کی مفتی رفیع عثمانی کے فرزند سے والد کی تعزیت
  • سید ذیشان حیدر بخاری متحدہ طلباء محاذ کے مرکزی جنرل سیکرٹری منتخب ہوئے ۔
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے اعلی سطحی وفد کی پرنسپل سیکرٹری وزیر اعظم پاکستان سے تعزیت
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کی نواب شاہ میں پریس کانفرنس
  • اپنے تنظیمی نظام اور سسٹم کو مضبوط سے مضبوط کرنے کی اشد ضرورت ہے۔ ورکر کنونشن
  • مفتی رفیع عثمانی کی وفات علمی حلقوں میں خلا مشکل سے پُر ہوگا علامہ شبیر میثمی

تازه خبریں

استحکام کیلئے مضبوط جمہوریت ضروری ہے، قومی اتفاق رائے سے معاملات آگے بڑھائے جائیں، قائد ملت جعفریہ

جعفریہ پریس – قائد ملت جعفریہ پاکستان حضرت آیت اللہ علامہ سید ساجد علی نقوی نے کہاہے کہ ملک انتہائی گھمبیر صورتحال کا شکار ہے، افہام و تفہیم کا راستہ اختیار کیا جائے، ملک میں امن و استحکام کیلئے مضبوط جمہوریت ضروری ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ملک کی موجودہ صورتحال پرتبصرہ کرتے ہوئے کیا۔
حضرت آیت اللہ علامہ سید ساجد علی نقوی نے کہا کہ اس وقت ملک انتہائی مشکل صورتحال سے دوچار ہے ایک جانب ملک کوسازشوں کا سامنا ہے جبکہ دوسری جانب اندرونی صورتحال
ا نتہائی کشیدہ ہوچکی ہے اور اس کے ساتھ ساتھ عوام کو انتہائی سنگین مشکلات کا سامنا ہے ۔
انہوں نے کہاکہ پاکستان کے اندر مختلف پلیٹ فارم اورمختلف جماعتیں ہیں ہر جماعت کے اپنے اہداف ،اپنا ایجنڈا، اپنا موقف اور فیصلے ہیں اور اپنی سرگرمیاں ہیں ہم تمام کے فیصلوں ، موقف اورسرگرمیوں کو ان کا جمہوری حق سمجھتے ہیں ۔ ملکی اور بین الاقوامی صورتحال کے تناظر میں یہ ضروری ہے کہ آئین اور قانون کے دائرے میں رہتے ہوئے سرگرمیاں جاری رکھی جائیں اور حکومت کو بھی ایسا رویہ اختیار کرنا چاہئیے جو آئین اور قانون کے مطابق ہو اور حکومت کو تحمل،بُرد باری ،سنجیدگی اور متانت کا مظاہر ہ کرنا چاہیے ایسی بات سے گریز کرنا چاہیے جس سے کشیدگی بڑھے ۔ اس کا واحد حل آئین و قانون کی روشنی میں مفاہمت، اصلاحات اور تبدیلی ہے اگر مفاہمت نہ ہوئی اور اصلاحات نہ ہوئیں یا گریز کیا گیا تو قوم بڑی مشکل میں مبتلا ہوسکتی ہے ۔ احتجاج کرنا کسی بھی جماعت کا جمہوری حق ہے البتہ ملک میں امن قائم کرنا بھی ہم سب کی ذمہ داری ہے۔
قائد ملت جعفریہ نے مزید کہاکہ اس وقت دنیا ئے اسلام کی صورتحال بھی انتہائی گھمبیر ہے جبکہ پاکستان تمام عالم اسلام کی توجہ کا مرکز ہے اس سلسلے میں پاکستان کو اپنا کردار ا دا کرنا چاہیے اور اس کیلئے ضروری ہے کہ ملک کے اندر اتحاد کو فروغ دیا جائے اور اتفاق رائے پیداکرکے آگے بڑھ کر عالم اسلام کی مشکلات کے حل میں اپنا کردار ادا کیا جائے۔