• اسلامی تحریک پاکستان صوبہ سندھ کا اجلاس کراچی میں منعقد ہوا
  • عزاداری مذہبی و شہری آزادیوں کا مسئلہ، قدغن قبول نہیں، علامہ شبیر میثمی
  • قائد ملت جعفریہ علامہ ساجد نقو ی کی ا پیل پر بھارت میں توہین آمیز ریمارکس پر ملک گیر احتجاج
  • قائد ملت جعفریہ پاکستان کی مختلف شخصیات سے ان کے لواحقین کے انتقال پر تعزیت
  • اسلامی تحریک پاکستان کا گلگت بلتستان حکومت میں شامل ہونے کا فیصلہ
  • علماء شیعہ پاکستان کے وفدکی وفاقی وزیر تعلیم سے ملاقات نصاب تعلیم پر گفتگو مسائل حل کئے جائیں
  • بلدیاتی انتخابات سندھ: اسلامی تحریک پاکستان کے امیدوار بلامقابلہ کامیاب
  • یاسین ملک کو دی جانے والی سزا ظلم پر مبنی ہے علامہ شبیر حسن میثمی شیعہ علماء کونسل پاکستان
  • ملی یکجہتی کونسل اجلاس علامہ شبیر میثمی نے اہم نکات کی جانب متوجہ کیا
  • کراچی میں دہشتگردی کی مذمت کرتے ہیں شیعہ علماء کونسل پاکستان صوبہ سندھ

تازه خبریں

اسلامی ممالک کے اقدامات کو مزید موثر بنایا جائے تاکہ بھارتی مسلمانوں کو دباﺅ اور ظلم سے بچایا جاسکے، قائد ملت جعفریہ پاکستان کا رد عمل

بھارت:شعائر اسلامی کی بڑھتی بے حرمتی قابل مذمت جمعہ کو یوم احتجاج منایا جائے گا علامہ ساجد نقوی

 بھارت میں پیغمبر اکرم اور شعائر اسلام کی بڑھتی بے حرمتی انتہائی قابل مذمت و قابل تشویش ،جمعہ یوم احتجاج منایاجائے، قائدملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد نقوی
اسلامی ممالک کے اقدامات کو مزید موثر بنایا جائے تاکہ بھارتی مسلمانوں کو دباﺅ اور ظلم سے بچایا جاسکے، قائد ملت جعفریہ پاکستان کا رد عمل
 بہترین خوراک زندگی کی بنیاد، کرئہ ارض کے ماحول کو بہتر اور وسائل کی تقسیم کو منصفانہ کئے بغیر چیلنج کا سامنا نہیں کیا جاسکتا، عالمی دن پر پیغام

 اسلام آباد 07جون 2022 ء( جعفریہ پریس پاکستان  ) قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی نے بھارت میں شعائر اسلام اور پیغمبر اکرم کے حوالے سے دیئے گئے ریمارکس کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہاکہ پڑوسی ملک میں پیغمبر اسلام اور شعائر اسلام کی بڑھتی بے حرمتی انتہائی قابل مذمت و قابل تشویش ہے، اسلامی ممالک کا رد عمل مستحسن ، مزید موثر اقدامات کرکے بھارتی مسلمانوں کو توہین، دباﺅ اور مظالم سے بچانے کی ضرورت ہے، یوم جمعہ یوم احتجاج کے طور پر مناتے ہوئے آئمہ جمعہ خطبات میں اس کےخلاف قراردادیں منظور کرائیں ۔

ان خیالات کا اظہار انہوںنے بھارت میں سیاسی رہنماﺅں کے سیاسی مباحث کے دوران شعائر اسلا م اور پیغمبر اسلام کے خلاف دیئے گئے ریمارکس کو گستاخانہ قرار دیتے ہوئے کہاکہ اس کی شدید الفاظ میں مذمت اور اس پر تشویش کا اظہار کیا ۔ قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی نے کہاکہ مقبوضہ کشمیر سمیت پورے انڈیا میں پہلے ہی مسلم کمیونٹی کےساتھ دیگر اقلیتوں کو مختلف اندا ز میں مظالم، دباﺅ اور توہین کا سامنا کرنا پڑ رہاہے جبکہ دوسری طرف سیاسی مباحثہ میں بھی توہین آمیز ریمارکس سے پوری دنیا باالخصوص مسلم دنیا کے جذبات کو شدید ٹھیس پہنچائی گئی اس حوالے سے پاکستان سمیت اسلامی ممالک کی جانب سے جس طرح رد عمل آیا وہ مستحسن البتہ ان اقدامات کو مزید موثر کئے جانے کی ضرورت ہے تاکہ بھارت میں مقیم مسلمانوں پر دباﺅ، توہین اور مظالم کا خاتمہ کیا جاسکے۔ قائد ملت جعفریہ پاکستان نے کہاہے کہ جمعة المبارک کو اجتماعات جمعہ میں اس کے خلاف بھرپور آواز بلند کریں اور انتہاءپسندی کے خلاف قراردادیں منظور کی جائیں ۔
دوسری جانب قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی نے 2018ءس تحفظ خوراک سے منسوب بین الاقوامی یوم پر اپنے پیغام میں کہاکہ بہترین خوراک زندگی کی بنیاد ہے، کرئہ ارض کے ماحول کو بہتر اور وسائل کی تقسیم کو منصفانہ کئے بغیر اس بڑھتے ہوئے چیلنج کا سامنا نہیں کیا جاسکتا، قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی نے کہاکہ اس وقت انسانیت کو درپیش سب سے بڑا مسئلہ انتہاءپسندی و دہشت گردی کے ساتھ اگر کوئی ہے تووہ بڑھتی ہوئی ماحولیاتی آلودگی اور اس کی وجہ سے بڑھتا ہوا درجہ حرارت اور وسائل کی تقسیم میں بے اعتدالی ہے، عالمی برادری کو ابھی سے اس ماحولیاتی تبدیلی ، اس کے اثرات، خوراک کی کمی ، غربت اور امارات میں بڑھتے ہوئے فرق کی جانب توجہ دینے کی ضرورت ہے قرآن پاک میں بھی آفاقی پیغام ہے کہ ” دولت چند ہاتھوں میں گھومتی نہ رہے “ اس فلسفے کو سمجھ کر آگے بڑھانے کی ضرورت ہے ، دنیا میں خوراک کے بے پناہ وسائل ہیں البتہ جب قدرتی نظام کو بگاڑنے کے اقدامات کیے گئے تو اس کے اثرات آج ماحولیاتی آلودگی اور ٹمریچر بڑھنے کی صورت میں سامنے آرہے ہیں اور اگر اس جانب سنجیدگی سے غور نہ کیاگیا تو پھر اس چیلنج سے نمٹا انتہائی مشکل ترین ہوگا ۔