• کوئٹہ میں ہونے والی دہشتگردی کی مذمت کرتے ہیں شیعہ علماء کونسل پاکستان
  • علامہ شبیر حسن میثمی کا علامہ سید علی حسین مدنی کے کتابخانہ کا دورہ
  • مفتی رفیع عثمانی کی وفات سے علمی حلقوں میں خلاء پیدا ہوا علامہ شبیر حسن میثمی
  • مسئول شعبہ خدمت زائرین ناصر انقلابی کا دورہ پاکستان
  • علامہ عارف واحدی کا سید وزارت حسین نقوی اور شہید انور علی آخوندزادہ کو خراجِ تحسین / دونوں عظیم شخصیات قومی سرمایہ تھیں
  • علامہ شبیر میثمی کی وفد کے ہمراہ علامہ افتخار نقوی سے ملاقات
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے وفد کی مفتی رفیع عثمانی کے فرزند سے والد کی تعزیت
  • سید ذیشان حیدر بخاری متحدہ طلباء محاذ کے مرکزی جنرل سیکرٹری منتخب ہوئے ۔
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے اعلی سطحی وفد کی پرنسپل سیکرٹری وزیر اعظم پاکستان سے تعزیت
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کی نواب شاہ میں پریس کانفرنس

تازه خبریں

جس معاشرے میں سزا و جزا کا عمل ختم کردیا جائے وہاں امن کا قیام ممکن نہیں، علامہ عارف واحدی

جعفریہ پریس – جس معاشرے میں سزا و جزاء کا عمل ختم کردیا جائے وہاں امن کا قیام ممکن نہیں، ملک میں کسی کی جان محفوظ نہیں، علماء کرام سے لے کر ججز ، صحافی اور بے یارو مددگار مسافروں تک ہر کوئی عدم تحفظ کا شکار ہے، حکومت کو چاہیے کہ انسانی حقوق کی بحالی کیلئے ہنگامی اقدامات اٹھائے- ان خیالات کا اظہار شیعہ علماء کونسل پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ عارف حسین واحدی نے ملک میں انسانی حقوق کی بگڑتی ہوئی صورتحال  پر تبصر ہ کرتے ہوئے کیا۔
علامہ عارف حسین واحدی نے مزید کہا کہ پاکستان میں دہشتگردوں کو کھلی چھوٹ دیدی گئی ہے جو سرعام دندناتے پھر رہے ہیں مگران کو روکنے والا کوئی نظر نہیں آتا۔ شہر قائد جو کہ ملک کا معاشی حب ہے اس کی حالت بھی انتہائی ناگفتہ بہ ہے ایک ایک دن میں درجن سے زائد افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا جاتاہے اور قاتل سرعام فرار ہونے میں کامیاب ہوجاتے ہیں جبکہ کراچی سے خیبر اور گلگت بلتستان سے کوئٹہ تک پورا ملک دہشت گردی کی آگ میں جل رہاہے اور انسانی حقوق کی ایسے دھجیاں بکھیری جارہی ہیں جس کی مثال نہیں ملتی ۔ انہوں نے کہا کہ ججز، صحافی، علماء کرام ، سیاستدان، بیوروکریٹس ، اہم تنصیبات سمیت کوئی جگہ بھی دہشتگردوں سے محفوظ نہیں جبکہ بے یارو مددگار مسافروں کو بھی بسوں سے اتار کر ٹارگٹ کا نشانہ بنایا دیا جاتاہے اس سے بدتر صورتحال کیا ہوسکتی ہے –
شیعہ علماء کونسل پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل  نے یہ بات زور دے کر کہی کہ جس معاشرے میں سزا ، جزا کا عمل ختم کردیا جاتاہے اس معاشرے میں امن کیسے قائم ہوگا ۔ گزشتہ کافی عرصے سے سزائے موت پر عملدرآمد کو معطل کردیاگیا ہے جس سے قاتلوں اور دہشت گردوں کو شہ مل رہی ہے ۔ اس لئے حکومت کو چاہیے کہ انسانی حقوق کی بحالی اور عوام کے تحفظ کیلئے ہنگامی اقدامات اٹھائے تاکہ دنیا میں پاکستان کا وقار بلند ہو۔