• علامہ رمضان توقیر سے علامہ آصف حسینی کی ملاقات
  • علامہ عارف حسین واحدی سے علماء کے وفد کی ملاقات
  • حساس نوعیت کے فیصلے پر سپریم کورٹ مزیدوضاحت جاری کرے ترجمان قائد ملت جعفریہ پاکستان
  • علامہ شبیر میثمی کی زیر صدارت یوم القد س کے انعقاد بارے مشاورتی اجلاس منعقد
  • برسی شہدائے سیہون شریف کا چھٹا اجتماع ہزاروں افراد شریک
  • اعلامیہ اسلامی تحریک پاکستان برائے عام انتخابات 2024
  • ھیئت آئمہ مساجد و علمائے امامیہ پاکستان کی جانب سے مجلس ترحیم
  • اسلامی تحریک پاکستان کے سیاسی سیل کا اجلاس اسلام آباد میں منعقد ہوا
  • مولانا امداد گھلو شیعہ علماء کونسل پاکستان جنوبی پنجاب کے صدر منتخب
  • اسلامی تحریک پاکستان کے زیر اہتمام فلسطین و کشمیر کانفرنس

تازه خبریں

دہشتگردی کی نئی لہر میں عوام کے محافظین پولیس کےخلاف کاروائیوں کوعوام میں خوف ہراس پھیلانے کی ناکام کوشش ہے ، مرکزی سیکرٹری جنرل شیعہ علماءکونسل

 دہشتگردی کے خاتمہ کیلئے سخت عملی اقدامات کرنا ہونگے،علامہ شبیرمیثمی

 دہشتگردی کے خاتمہ کیلئے سخت عملی اقدامات کرنا ہونگے،علامہ شبیرمیثمی
دہشتگردی کی نئی لہر میں عوام کے محافظین پولیس کےخلاف کاروائیوں کوعوام میں خوف ہراس پھیلانے کی ناکام کوشش ہے ، مرکزی سیکرٹری جنرل شیعہ علماءکونسل
 شیعہ جامع مسجد کوچہ رسالداراور پولیس لائن مسجدمیں ہونے والی دہشتگردی میں ملوث مجرموں کو فی الفور قانون کے کٹہرے میں لا کر قرار واقعی سزا دی جائے۔
روالپنڈی/اسلام آباد 31 جنوری 2023ء(  جعفریہ پریس پاکستان  )شیعہ علماءکونسل پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ ڈاکٹر شبیر حسن میثمی نے پشاور پولیس لائن مسجدمیں ہونے والے دھماکے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے واقعے میں جانی نقصان پر شدید رنج و غم کا اظہار کیا ہے۔ اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ دہشتگردی کے خاتمہ کیلئے سخت عملی اقدامات کرنا ہونگے اور انہوں نے دہشت گردی کی نئی لہر میں عوام کے محافظین پولیس کے خلاف کاروائیوں کوعوام میں خوف ہراس پھیلانے کی ناکام کوشش قرار دیا اور عوام کا دہشتگردوں کے خلاف پولیس کے شانہ بشانہ کھڑے رہنے کے عزم کا اعادہ کیا۔ علامہ ڈاکٹر شبیر حسن میثمی کا کہنا تھا کہ ملک بھر میں بالخصوص کے پی پولیس کی تاریخ قربانیوں سے بھری پڑی ہے اور جس طرح مشکل وقت میں پولیس نے عوام کے تحفظ کے لیے دن رات کام کیا اسی طرح عوام بھی اپنے پولیس کے دکھ درد اور مدد کے لیے ہمہ وقت تیار رہے گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ شیعہ جامع مسجد کوچہ رسالدار کے واقعے کے بعد پوری قوم کی جانب سے مطالبہ کیا گیا تھا کہ اس واقعے کی جوڈیشل انکوائری کر کے ذمہ دارون کا تعین کیا جائے اگر یہ کام اس وقت ہوتا تو آج ہمیں یہ سانحہ نہ دیکھنا پڑتا۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ اب بھی حکومت کو چائیے کہ وہ دونوں واقعات کی تہہ تک پہنچنے کے لیے ہر دو واقعات کے لیے جوڈیشل کمیشن کا فوری قیام عمل میں لا کر ان واقعات کے اصل محرکات سے پردہ اٹھائیں اور ان واقعات میں ملوث مجرموں کو فی الفور قانون کے کٹہرے میں لا کر قرار واقعی سزا دیں۔ شیعہ علماءکونسل پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ ڈاکٹر شبیر حسن میثمی نے سانحہ پولیس لائن کے شہداءکے خانوادوں سے اظہار تعزیت کرتے ہوئے شہداءکی بلندی درجات اور زخمیوں کی صحتیابی کے لیے بھی دعا کی۔