• تعلیم یافتہ نسل ، ملک و قوم کی ترقی کی ضمانت ہے، علامہ ڈاکٹر شبیرحسن میثمی
  • کوئٹہ میں ہونے والی دہشتگردی کی مذمت کرتے ہیں شیعہ علماء کونسل پاکستان
  • علامہ شبیر حسن میثمی کا علامہ سید علی حسین مدنی کے کتابخانہ کا دورہ
  • مفتی رفیع عثمانی کی وفات سے علمی حلقوں میں خلاء پیدا ہوا علامہ شبیر حسن میثمی
  • مسئول شعبہ خدمت زائرین ناصر انقلابی کا دورہ پاکستان
  • علامہ عارف واحدی کا سید وزارت حسین نقوی اور شہید انور علی آخوندزادہ کو خراجِ تحسین / دونوں عظیم شخصیات قومی سرمایہ تھیں
  • علامہ شبیر میثمی کی وفد کے ہمراہ علامہ افتخار نقوی سے ملاقات
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے وفد کی مفتی رفیع عثمانی کے فرزند سے والد کی تعزیت
  • سید ذیشان حیدر بخاری متحدہ طلباء محاذ کے مرکزی جنرل سیکرٹری منتخب ہوئے ۔
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے اعلی سطحی وفد کی پرنسپل سیکرٹری وزیر اعظم پاکستان سے تعزیت

تازه خبریں

دہشت گردوں کے ساتھ معاہدہ شہداء کے خون سے غداری کے مترادف ہے جس کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا،ذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے من گھڑت پراپیگنڈے سے گریز کیا جائے

جعفریہ پریس – ترجمان قائد ملت جعفریہ پاکستان نے تکفیری و دہشت گرد گروہ سے کسی بھی قسم کی ڈیل کی یکسر تردید کرتے ہوئے کہاہے کہ قوم کے قاتلوں کے ساتھ کسی قسم کا معاہدہ شہداء کے خون سے غداری ہے، تکفیریوں کے ساتھ معاہدہ تو درکنار بیٹھنا تک گوارہ نہیں، ذمہ داری کا مظاہر کرتے ہوئے من گھڑت پراپیگنڈے سے گریز کیا جائے ۔
ان خیالات کا اظہار انہوں نے شائع ہونے والی خبر کی پرزور الفاظ میں تردید کرتے ہوئے کیا۔ترجمان نے کہاکہ تحریک جعفریہ پاکستان کا دامن اس قسم کی آلائشوں سے ہمیشہ پاک رہا ہے اور توازن کی پالیسی کے تحت ہمیں تکفیریوں اور دہشت گردوں کے ساتھ بریکٹ کیا جاتا رہا ہے تحریک جعفریہ پاکستان کے حوالے سے کوئی مجرم جیل میں نہیں ہے ہمارا ہمیشہ سے دوٹوک اور واضح موقف رہاہے کہ ملک میں اسی وقت صحیح معنوں میں امن قائم کیاجاسکتا ہے جب معصوم انسانی جانوں کے قاتلوں، سرپرستوں اور سہولت کاروں کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے ۔ انہوں نے کہاکہ تکفیری و دہشت گردوں کے ساتھ بات چیت بھی شہداء کے خون سے غداری تصورکرتے ہیں تو ان سے معاہدہ کس طرح کیا جاسکتاہے؟۔ ترجمان نے مزید کہاکہ ہم نے ہمیشہ اتحاد امت و استحکام پاکستان کیلئے کوششیں کی ہیں جو کہ اظہر من الشمس اور ملک و قوم کے سامنے ہیں ۔انہوں نے مزید کہاکہ اکرام الحق عرف لاہوری جیسے دہشت گرد کے ساتھ کوئی ڈیل نہیں ہوئی، تحریک جعفریہ کا کوئی عہدیدار اور رکن اس قسم کا اقدام قطعاً نہیں کر سکتا ۔ انہوں نے مزید کہاکہ اس سلسلے میں ذمہ داری کا مظاہرہ کرنا چاہیے اور اس طرح کی خبروں کی اشاعت یا چلانے سے قبل ضرور استفسارکرکے تصدیق کی جائے یہی صحافتی اصولوں اور اقدار کا تقاضا بھی ہے۔