• تعلیم یافتہ نسل ، ملک و قوم کی ترقی کی ضمانت ہے، علامہ ڈاکٹر شبیرحسن میثمی
  • کوئٹہ میں ہونے والی دہشتگردی کی مذمت کرتے ہیں شیعہ علماء کونسل پاکستان
  • علامہ شبیر حسن میثمی کا علامہ سید علی حسین مدنی کے کتابخانہ کا دورہ
  • مفتی رفیع عثمانی کی وفات سے علمی حلقوں میں خلاء پیدا ہوا علامہ شبیر حسن میثمی
  • مسئول شعبہ خدمت زائرین ناصر انقلابی کا دورہ پاکستان
  • علامہ عارف واحدی کا سید وزارت حسین نقوی اور شہید انور علی آخوندزادہ کو خراجِ تحسین / دونوں عظیم شخصیات قومی سرمایہ تھیں
  • علامہ شبیر میثمی کی وفد کے ہمراہ علامہ افتخار نقوی سے ملاقات
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے وفد کی مفتی رفیع عثمانی کے فرزند سے والد کی تعزیت
  • سید ذیشان حیدر بخاری متحدہ طلباء محاذ کے مرکزی جنرل سیکرٹری منتخب ہوئے ۔
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے اعلی سطحی وفد کی پرنسپل سیکرٹری وزیر اعظم پاکستان سے تعزیت

تازه خبریں

عراق کے شہر موصل پر تکفیری گروہ کے ہزاروں دھشتگردوں کا حملہ ۔ موصل پر قبضہ , کرکوک کی طرف روانہ ۔ فوج کی جوابی کاروائی

جعفریہ پریس – بین القوامی تکفیری گروپ داعش کے ہزاروں دھشتگردوں نے عراق کے شمالی علاقے میں صوبہ نینوا پر حملہ کردیا ۔ جعفریہ پریس کے نمائندے کی رپورٹ کے مطابق گذشتہ رات سے ہزاروں کی تعداد میں دھشتگردوں نے صوبہ نینوا کے شہر موصل پر حملہ کردیا جس میں مختلف ہتیار استعمال کیا گیا ۔ ابتدائی معلومات کے مطابق داعش کے دھشتگردوں نے گورنر ہاوس ، ائیر پورٹ اور شہر کے مختلف علاقوں پر قبضہ کر لیا دھشتگردوں نے سینٹرل جیل پر بھی حملہ کر کے 1400 کے قریب قیدیوں کو رہا کروایا ۔ اس حملے میں اہلسنت برادری کے دسیوں لوگ جانبحق ہو گئے جس کے بعد شہر بھر میں مخلتف علماء اور مشایخ نے مساجد میں اعلان کیا کہ جو شخص ہتیار اٹھا سکتا ہے اس پر لازمی ہے کہ وہ ہتیار اٹھا کر دھشتگردوں کا مقابلہ کرے ۔ جس کے بعد سیکڑوں لوگوں نے فوج اور انتظامیہ کا ساتھ دیتے ہوئے دھشتگردوں کا مقابلہ کیا ۔
اس صورتحال کے مد نظر وزیر اعظم نوری مالکی نے ملک بھر میں ایمرجنسی نافذ کرتے ہوئے ملک بھر میں فوج اور انتظامیہ کو ہائی الرٹ کردیا ہے اوران دھشتگردوں کا مقابلہ کرنے کیلئے شہریوں سے ہتیار اٹھانے کی اپیل کی ہے۔۔ تازہ ترین رپورٹ کے مطابق داعش کے دھشتگرد کرکوک شہر کے طرف بڑھ رہے ہیں ۔ دوسری جانب عراقی فوج نے دھشتگردوں کے ایک ٹیم کو کربلا کے راستے میں روک دیا ہے ۔جبکہ موصل میں فوج اور انتظامیہ کی جانب سے دھشتگردوں کے مقابلے میں شدت سے جنگ جاری ہے جو کہ آخری اطلاعات کے مطابق فوج کچھ علاقوں کو دھشتگردوں سے آزاد کرانے میں کامیاب ہوچکی ہے ۔ عراقی افواج نے تازہ ترین حملے میں ائیر فورس کا سہارا لیتے ہوئے دھشتگردوں کے ٹھکانوں پر جنگی طیاروں سے بمباری کی ہے جس میں اطلاعات کے مطابق کثیر تعداد میں دھشتگرد ہلاک ہوئے ہیں ۔
تجزیہ نگاروں نے کہا ہے کہ تکفیری ٹولہ شام میں سنگین شکست کھانے کے بعد اب شام سے عراق منتقل ہو چکا ہے ۔
سانحہ پاکستان کراچی ائیر پورٹ کے فورا بعد عراق میں تکفیری گروہ کا اس قدر سنگین حملہ قابل غور ہے ۔  واضح رہے کہ کچھ دن پہلے داعش کے ہزاروں دھشتگردوں نے اسی طرح سامراء پر حملہ کیا تھا مگر انتظامیہ اور غیور مومنین اور فوج کی جوابی کاروائی میں انہیں سخت شکست کا سامنا کرنا پڑا جس میں سینکڑوں دہشتگرد ہلاک ہوئے۔