• کوئٹہ میں ہونے والی دہشتگردی کی مذمت کرتے ہیں شیعہ علماء کونسل پاکستان
  • علامہ شبیر حسن میثمی کا علامہ سید علی حسین مدنی کے کتابخانہ کا دورہ
  • مفتی رفیع عثمانی کی وفات سے علمی حلقوں میں خلاء پیدا ہوا علامہ شبیر حسن میثمی
  • مسئول شعبہ خدمت زائرین ناصر انقلابی کا دورہ پاکستان
  • علامہ عارف واحدی کا سید وزارت حسین نقوی اور شہید انور علی آخوندزادہ کو خراجِ تحسین / دونوں عظیم شخصیات قومی سرمایہ تھیں
  • علامہ شبیر میثمی کی وفد کے ہمراہ علامہ افتخار نقوی سے ملاقات
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے وفد کی مفتی رفیع عثمانی کے فرزند سے والد کی تعزیت
  • سید ذیشان حیدر بخاری متحدہ طلباء محاذ کے مرکزی جنرل سیکرٹری منتخب ہوئے ۔
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے اعلی سطحی وفد کی پرنسپل سیکرٹری وزیر اعظم پاکستان سے تعزیت
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کی نواب شاہ میں پریس کانفرنس

تازه خبریں

علامہ مرزا یوسف حسین پر قاتلانہ حملہ حکومتی ارکان کے منہ پر ایک اور طمانچہ ہے،عبداللہ رضا

جعفریہ پریس- جعفریہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کے مرکزی سینیئر نائب صدر برادر عبداللہ رضا نے کہا ہے کہ آئے روز ملک میں دہشت گردی کے واقعات ہو رہے ہیں، مہنگائی آسمانوں کو چھو رہی ہے، ملک خانہ جنگی کی طرف بڑھ رہا ہے جبکہ ہمارے وزیراعظم صاحب یہ بیان دیتے ہوئے نظر آتے ہیں کہ دہشت گردوں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا۔ ملکی صورت حال دن بدن خراب ہوتی جا رہی ہے اور حکومتی ارکان بیان بازی کے علاوہ کوئی عملی اقدام نہیں کر رہے۔ سانحہ عاشورہ کے بعد سے پورے ملک میں تسلسل سے دہشت گردی کے واقعات ہو رہے ہیں لیکن آج تک حکومت نے کسی بھی دہشت گرد کو گرفتار نہیں کیا۔ ان خیالات کا اظہار جے ایس او پاکستان کے مرکزی سینئیر نائب صدر برادر عبداللہ رضا نے علامہ مرزا یوسف حسین پر قاتلانہ حملہ کی شدید مذمت کرتے  ہوئے کیا۔
انہوں نے مزید کہا کہ اگر حکومت گذشتہ واقعات میں ملوث دہشت گردوں کو گرفتار کرکے منظر عام پر لاتی اور ان کو فوری سزائیں دی جاتیں تو دہشت گردی کے ان واقعات پر قابو پایا جاسکتا تھا۔ جے ایس او کے مرکزی سینیئر نائب صدر نے کہا کہ کل کراچی میں علامہ مرزا یوسف حسین پر قاتلانہ حملہ حکومتی ارکان کے منہ پر ایک اور طمانچہ ہے،دہشت گردی کا یہ واقعہ حکومت کی رٹ کو چیلنج کر رہا ہے، ہم اس واقعہ کی بھرپور مذمت کرتے ہیں اور حکومت وقت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ ملک میں لاء اینڈ آرڈر کی بگڑتی ہوئی صورتحال پر فی الفور قابو پایا جائے،اگر ایسا نہ کیا گیا تو وہ وقت دور نہیں کہ جب عوام اپنے ان نمائندوں کو جنہیں وہ ووٹ کی طاقت سے بر سراقتدار لائے تھے انہی نمائندوں کو سڑکوں پر گھسیٹتے ہوئے نظر آئیں گے۔