جعفریہ پریس – حامد میر پر حملہ آزادی صحافت پر حملہ ہے، حق و سچ کی آواز کو تشدد کے ذریعے نہیں دبایا جاسکتا،  قانون نافذ کرنیوالے ادارے کہاں ہیں۔۔۔؟، اللہ تعالیٰ حامدمیر کو محفوظ رکھے ، مشکل گھڑی میں صحافی برادری کے ساتھ کھڑے ہیں۔
ہفتہ کی شام کراچی میں جیونیوز کے معروف اینکر پرسن و سینئر صحافی حامد میر پر ہونیوالے قاتلانہ حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے قائد ملت جعفریہ پاکستان حضرت آیت اللہ علامہ سید ساجد علی نقوی نے کہا ہے کہ ملک میں کسی کی جان محفوظ نہیں، قانون نافذ کرنیوالے ادارے کہاں ہیں ؟ حضرت آیت اللہ علامہ سید ساجد علی نقوی نے کہا کہ حق و سچ کی آواز کو تشدد کے ذریعے نہیں دبایا جاسکتا،اللہ تعالیٰ سے دعا ہے کہ وہ انہیں محفوظ رکھے ۔
اپنے مذمتی بیان میں شیعہ علماء کونسل کے سیکرٹری جنرل علامہ عارف حسین واحدی نے کہا کہ حامد میر پر ہونیوالے حملے کی نہ صرف مذمت کرتے ہیں بلکہ اسے ہم آزادی صحافت پر حملے کے مترادف سمجھتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں صحافی، وکلاء، ججز ، علماء سمیت کسی کی جان محفوظ نہیں۔سینئر صحافی اور جیو کے اینکر حامد میر کی صحت یابی کیلئے دعا گو ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ اس مشکل گھڑی میں صحافی برادری کے ساتھ کھڑے ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here