• اسلامی تحریک پاکستان صوبہ سندھ کا اجلاس کراچی میں منعقد ہوا
  • عزاداری مذہبی و شہری آزادیوں کا مسئلہ، قدغن قبول نہیں، علامہ شبیر میثمی
  • قائد ملت جعفریہ علامہ ساجد نقو ی کی ا پیل پر بھارت میں توہین آمیز ریمارکس پر ملک گیر احتجاج
  • قائد ملت جعفریہ پاکستان کی مختلف شخصیات سے ان کے لواحقین کے انتقال پر تعزیت
  • اسلامی تحریک پاکستان کا گلگت بلتستان حکومت میں شامل ہونے کا فیصلہ
  • علماء شیعہ پاکستان کے وفدکی وفاقی وزیر تعلیم سے ملاقات نصاب تعلیم پر گفتگو مسائل حل کئے جائیں
  • بلدیاتی انتخابات سندھ: اسلامی تحریک پاکستان کے امیدوار بلامقابلہ کامیاب
  • یاسین ملک کو دی جانے والی سزا ظلم پر مبنی ہے علامہ شبیر حسن میثمی شیعہ علماء کونسل پاکستان
  • ملی یکجہتی کونسل اجلاس علامہ شبیر میثمی نے اہم نکات کی جانب متوجہ کیا
  • کراچی میں دہشتگردی کی مذمت کرتے ہیں شیعہ علماء کونسل پاکستان صوبہ سندھ

تازه خبریں

قرآن کریم سر چشمہ ہدایت ,درود اتحاد اُمت کا مظہر ہے، علامہ شبیر میثمی

قرآن کریم سر چشمہ ہدایت ,درود اتحاد اُمت کا مظہر ہے، علامہ شبیر میثمی

قرآن کریم سر چشمہ ہدایت ,درود اتحاد اُمت کا مظہر ہے، علامہ شبیر میثمی
نماز میں درود مسنون ہے جیسے ترک نہیں کیا جا سکتا، علامہ افتخار حسین نقوی ، اتحاد امت میں نفاق کا راستہ امت مسلمہ کو مل کر روکنا ہو گا، مفتی گلزار نعیمی
 کانفرنس سے مفتی حسیب نذیری، علامہ انیس الحسنین، موالانا محمود احمد تبسم، پیر سعید نقشبندی، سید اظہار بخاری، قاری علی اکبر نعیمی، علامہ سجاد ہمدانی، زاہد علی آخونزادہ، و دیگر نے خطاب کیا
اسلام آباد/راولپنڈی 28 اپریل 2021( جعفریہ پریس پاکستان  )شیعہ علماءکونسل پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ ڈاکٹر شبیر حسن میثمی نے کہا ہے کہ قرآن کریم فرقان حمید سرچشمہ ہدایت ہے اور درود شریف قلوب کی بالیدگی اور اتحاد امت کا مظہر ہے۔ اسلام آباد ہوٹل میں شیعہ علماءکونسل پاکستان کے زیر انتظام منعقدہ “عظمت قرآن و درود کانفرنس” سے خطاب کرتے ہوئے علامہ ڈاکٹر شبیر حسن میثمی نے کہا کہ اصول دین میں تبدیلی کی گنجائش نہیں ہے کیونکہ احکامات الہیہ پر من عن عمل پیرا ہونا مومن کی پہچان اور نجات کا ذریعہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ امت مسلمہ کا جس طرح قرآن کریم پر لاریب ایمان ہے اسی طرح مسنون درود پر بھی کوئی اختلاف نہیں لہذا ایسی مذموم کوششیں جو امت میں نفاق کا ذریعہ بنے اس کو متحد ہو کر ناکام بنانا امت مسلمہ کا فرض ہے۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے علامہ سید افتخار حسین نقوی نے کہا کہ نماز میں درود مسنون ہے جیسے ترک نہیں کیا جا سکتا۔درود کے معاملے پر سابق حکومت نے نصاب تعیلم میں جو تبدیلی کی وہ مسلمانوں میں نفاق کا باعث بنی۔ انہوں نے کہا کہ ملک عزیز کی اتحاد امت کے لیے ناگزیر ہے کہ موجود حکومت اس معاملے پر اہل اسلام کے تحفظات دور کر کے امت میں افتراق و انتشار کو دور کرے۔ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مفتی گلزار نعیمی نے کہا کہ قرآن مکمل ضابطہ حیات ہے جس میں درود اہل محبت کا شعار بتایا گیا ہے۔ تاہم کچھ لوگ اہل محبت میں متفقہ علیہ امور کو چھیڑ کر افتراق پیدا کرنے کی کوششیں کر کے دین کو کمزور کرنا چاہتے ہیں جس کا اہل اسلام کے تمام جید فقہاءکو مل کر راستہ روکنا ہوگا۔ کانفرنس سے مفتی حسیب نذیری، علامہ انیس الحسنین، موالانا محمود احمد تبسم، پیر سعید نقشبندی، سید اظہار بخاری، قاری علی اکبر نعیمی، علامہ سجاد ہمدانی، زاہد علی آخونزادہ، علامہ سید جعفر نقوی، علامہ قاسم جعفری ل، سید جہانگیر شاہ سعیدی، قاری علی جعفر، قاری محمد اشفاق چشتی اور قاری انعام الحق نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دشمن مسلمانوں کو تقسیم کرنے پر تلا ہوا ہے ایسے حالات میں مسلمانوں کا فرض ہے کہ وہ اتحاد امت کو فروغ دے اور امت کی متفقہ علیہ امور کے خلاف مذموم کوششوں کو باہم متحد ہو کر ناکام بنائے۔ انہوں نے نصاب تعلیم سمیت درود و سلام کے معاملے پر اتحاد و اتفاق کا یونہی عملی مظاہرہ جاری رکھنے کے عزم کا بھی اعادہ کیا۔”عظمتِ قرآن و درود کانفرنس” میں مختلف مسالک کے علما و مشائخ کے علاوہ سینئر صحافی، مذہبی و سماجی شخصیات ، دینی جماعتوں کے عہدیداران ، دینی مدارس کے سربراہان و اساتذہ، آئمہ جمعہ و جماعت اور مختلف شعبہ حیات سے تعلق رکھنے والے زعما و اکابرین نے بھی شرکت کی۔