• ایران اور سعودی عرب کے درمیان سفارتی تعلقات کی بحالی وقت کی ضرورت ھے۔علامہ عارف واحدی
  • اسلامی تحریک پاکستان کا صوبائی ا نتخابات میں بھرپور حصہ لینے کا اعلان
  • جامعہ جعفریہ جنڈ کے زیر اہتمام منعقدہ عظیم الشان نہج البلاغہ کانفرنـــــس
  • سانحہ پشاور مجرموں کی عدم گرفتاری حکومتوں کی ناکامی کا منہ بولتا ثبوت ہے، ترجمان قائد ملت جعفریہ ہاکستان
  • سانحہ بسری کوہستان !عشرہ گزر گیا مگر قاتل پکڑے گئے نہ مظلومین کو انصاف ملا،
  • راہِ حسین(ع) پر چلنے کیلئے شہداء ملت جعفریہ نے ہمیں بے خوف بنا دیا ہے۔علامہ شبیر حسن میثمی
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان سندھ کے زیر اہتمام کل شہدائے سیہون کی برسی کا اجتماع ہوگا
  • شہدائے سیہون شریف کی برسی میں بھرپور شرکت کو یقینی بنائیں علامہ شبیر حسن میثمی
  • ثاقب اکبر کی وفات پر خانوادے سے اظہار تعزیت کرتے ہیں علامہ عارف حسین واحدی
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کی ثاقب اکبر کے انتقال پر تعزیت

تازه خبریں

دہشتگردی کی نئی لہر میں عوام کے محافظین پولیس کےخلاف کاروائیوں کوعوام میں خوف ہراس پھیلانے کی ناکام کوشش ہے ، مرکزی سیکرٹری جنرل شیعہ علماءکونسل

لکی مروت پولیس جوانوں کی شہادت افسوسناک ہے انتظامیہ واقعہ کی تحقیق کرے علامہ شبیر میثمی

لکی مروت میں دہشت گردوں کی جانب سے پولیس موبائل پر حملہ کر کے پولیس جوانوں کو شہید کرنادہشت گردی کی بد ترین کاروائی ہے۔علامہ شبیر حسن میثمی
حکومت ملک میں امن وامان کی صورتحال بہتر کر نے کے دعوے کر رہی ہے ہو تو یہ کاروائیاں اُن کے دعوے پر سوالیہ نشان ہے۔علامہ شبیر حسن میثمی
حکومت کو چائیے کہ ایک بار پھر دہشت گردو کو لگام دینے کے لئے بھر پور آپریشن کیا جائے۔علامہ شبیر حسن میثمی
کراچی(اسٹاف رپورٹر) شیعہ علماء کونسل پاکستان کے مر کزی سیکر ٹری جنرل علامہ شبیر حسن میثمی کا کہناہے کہ خیبر پختو نخواہ کے ضلع لکی مروت میں دہشت گردو کی جانب سے پولیس موبائل پر حملہ کر کے پولیس جوانوں کو شہید کرنادہشت گردی کی بد ترین کاروائی ہے جس کی ہم پُروزالفاظ میں شد ید مذمت کر تے ہیں حکومت ملک میں امن وامان کی صورتحال بہتر کر نے کے دعوے کر رہی ہے ہو تو یہ کاروائیاں اُن کے دعوے پر سوالیہ نشان ہے آج بے لگام قا تلوں نے اس ملک کی فضاء کو پھر ایک بارپُر تشدد بنایا اور پا کستان کی سالمیت پر حملہ کیا عوام کے جان مال کی ذمہ داری حکومت کی ہے لہذا آئین اور قانون پر عملدرآمد کیا جائے اس کاروائی سے ایسا لگتا ہے کہ ملک میں پھر ایک بار دہشت گرد آگ اور خون کے کھیل کا دوبارہ آغاز چاہتے ہیں حکومت کو چائیے کہ ایک بار پھر دہشت گردو کو لگام دینے کے لئے بھر پور آپریشن کیا جائے تا کہ آئندہ اس طرح کے دل سوز دہشت گردانہ کاروائیوں سے بچا جا سکے۔