• ایران اور سعودی عرب کے درمیان سفارتی تعلقات کی بحالی وقت کی ضرورت ھے۔علامہ عارف واحدی
  • اسلامی تحریک پاکستان کا صوبائی ا نتخابات میں بھرپور حصہ لینے کا اعلان
  • جامعہ جعفریہ جنڈ کے زیر اہتمام منعقدہ عظیم الشان نہج البلاغہ کانفرنـــــس
  • سانحہ پشاور مجرموں کی عدم گرفتاری حکومتوں کی ناکامی کا منہ بولتا ثبوت ہے، ترجمان قائد ملت جعفریہ ہاکستان
  • سانحہ بسری کوہستان !عشرہ گزر گیا مگر قاتل پکڑے گئے نہ مظلومین کو انصاف ملا،
  • راہِ حسین(ع) پر چلنے کیلئے شہداء ملت جعفریہ نے ہمیں بے خوف بنا دیا ہے۔علامہ شبیر حسن میثمی
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان سندھ کے زیر اہتمام کل شہدائے سیہون کی برسی کا اجتماع ہوگا
  • شہدائے سیہون شریف کی برسی میں بھرپور شرکت کو یقینی بنائیں علامہ شبیر حسن میثمی
  • ثاقب اکبر کی وفات پر خانوادے سے اظہار تعزیت کرتے ہیں علامہ عارف حسین واحدی
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کی ثاقب اکبر کے انتقال پر تعزیت

تازه خبریں

پنڈی واقعہ کو بہانہ بنا کر گلگت شہر میں شرپسندوں نے امن و امان خراب کرنے کی کوشش کی شر پسندوں کے خلاف قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے، شیخ مرزا علی

جعفریہ پریس – شیعہ علما ء کونسل گلگت ڈویژن کا ایک ہنگامی اجلاس زیر صدارت صدر شیعہ علماء کونسل گلگت ڈویژن شیخ مرزا علی کے منعقد ہوا جسمیں تنظیمی احباب کے علاوہ جے ۔ایس ۔او ، جعفریہ یوتھ کے ارکین نے شرکت کی ۔ اجلاس میں پنڈی میں جلوس عاشورہ پر فائرنگ کی شدید الفاظ میں مذمت کی گئی ۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے شیخ مرزا علی نے کہا کہ محرم الحرام سے قبل رولپنڈی کے در و دیوار پر شر آنگیز وال چاکنگ کی گئی مگر حکومت نے کوئی اقدام نہیں اُٹھایا جس کے باعث عاشورہ کے دن یہ دلخراش واقعہ پیش آیا ۔ انہوں نے کہا کہ کہ دو دن قبل فیس بک پر یہ خبر چل رہی تھی کہ مذکورہ مدرسہ اور مسجد میں جمع ہو جائیں مگر پنڈی انتظامیہ کی کاروائی نہ کرنا باعث تشویش ہے ۔ انہوں نے کہا کہ قائد ملت جعفریہ پاکستان حضرت آیت اللہ علامہ سید ساجد علی نقوی کی پالیسی کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ عدالتی تحقیقات کرکے پنجاب میں جلائے جانے والے امام بارگاہ ، مدرسہ کو نذر آتش کرنے والوں کی گرفتاری عمل میں لائی جائے ۔ اجلاس میں پنڈی واقعہ کو بہانہ بنا کر گلگت شہر میں شرپسندوں نے امن و امان خراب کرنے کی کوشش کی شر پسندوں کے خلاف قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے تاکہ سیکورٹی اداروں کی جانب سے شہر میں امن وامان قائم رکھنے کے تسلسل کو برقرار رکھا جاسکے ۔