• تعلیم یافتہ نسل ، ملک و قوم کی ترقی کی ضمانت ہے، علامہ ڈاکٹر شبیرحسن میثمی
  • کوئٹہ میں ہونے والی دہشتگردی کی مذمت کرتے ہیں شیعہ علماء کونسل پاکستان
  • علامہ شبیر حسن میثمی کا علامہ سید علی حسین مدنی کے کتابخانہ کا دورہ
  • مفتی رفیع عثمانی کی وفات سے علمی حلقوں میں خلاء پیدا ہوا علامہ شبیر حسن میثمی
  • مسئول شعبہ خدمت زائرین ناصر انقلابی کا دورہ پاکستان
  • علامہ عارف واحدی کا سید وزارت حسین نقوی اور شہید انور علی آخوندزادہ کو خراجِ تحسین / دونوں عظیم شخصیات قومی سرمایہ تھیں
  • علامہ شبیر میثمی کی وفد کے ہمراہ علامہ افتخار نقوی سے ملاقات
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے وفد کی مفتی رفیع عثمانی کے فرزند سے والد کی تعزیت
  • سید ذیشان حیدر بخاری متحدہ طلباء محاذ کے مرکزی جنرل سیکرٹری منتخب ہوئے ۔
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے اعلی سطحی وفد کی پرنسپل سیکرٹری وزیر اعظم پاکستان سے تعزیت

تازه خبریں

اختیارات سے تجاوزو ناجائز استعمال نے ریاست پاکستان کو یرغمال بنادیا13 سال تک بلا جواز پابندی فاسد نظام کے باعث رہی، سپریم کورٹ کا فیصلہ اس بات کا مظہر ہے ، ترجمان قائد ملت جعفریہ

ترجمان قائد ملت جعفریہ پاکستان نے تحریک جعفریہ پاکستان پر پابندی کیخلاف سپریم کورٹ کی جانب سے صدارتی ریفرنس کو کالعدم قرا ر دینے کو سراہتے ہوئے کہاہے کہ آج ملک کی بد ترین حالت کی وجہ یہ ہے کہ یہاں ایک عرصہ سے اختیارات سے تجاوز اور اختیارات کا ناجائز استعمال کیا جارہاہے، ریاست پاکستان کو یرغمال بنا کر رکھ دیاگیاہے جس کا مظہر یہی پابندی کیس ہے ، ملکی ترقی و سا لمیت کیلئے ہمیں نظام میں اصلاحات کرنا ہونگی اورجھوٹ، بدنیتی ، منافقت ،اور زور و زر پر مبنی نظام کو یکسر مسترد کرنا ہوگا۔
صدارتی آرڈیننس کے تحت بلاجواز13 سال تک جاری رہنے والی پابندی کو سپریم کورٹ کی جانب سے کالعدم قرار دینے کے فیصلے کو سراہتے ہوئے ترجمان قائد ملت جعفریہ پاکستان نے کہاہے کہ افسوس ارض وطن میں اختیارات سے تجاوز اور ناجائز استعمال نے اس ملک کو یرغمال بنادیاہیچنانچہ13سال تک ہمیں اس کا سامنا کرنا پڑا اور ملکی سلامتی کے لئے ہم نے اس کرب اور تکلیف کو برداشت کیا۔
ترجمان نے کہاکہ ملک میں جھوٹ ،بدنیتی ، منافقت اور زور و زر کا نظام چلایا جارہاہے جس کی وجہ سے عدالتی نظام بھی شہریوں کو انصاف فراہم کرنے سے قاصر ہے۔ انہو ں نے کہاکہ پاکستان مشکلات اور بحر انوں میں گھرا ہوا ہے اس کے ترقی میں پیچھے رہ جانے کی بڑی وجہ یہی ہے کہ یہاں اختیارات سے تجاوز اور ناجائز استعمال ہوتاہے اور ریاست پاکستان کو یرغمال بنادیاگیاہے جس کانمایاں مظہر یہی کیس ہے ۔ 
انہوں نے کہاکہ 13 سال تک ہم اسی کا شکار اور سخت کرب میں مبتلا رہے لیکن اب طے کرنا ہو گا کیااس ملک میں یہی استیصالی ،جھوٹ، بدنیتی، منافقت اورزور و زر پر مبنی نظام چلے گا یاپھر سچ اور دیانتداری کو رائج کیا جائیگا تاکہ ملک صحیح معنوں میں ایسی فلاحی مملکت بن سکے جس کا خواب شاعر مشرق نے دیکھا اور جس کو عملی جامہ بانی پاکستان نے پہنایا تھا۔