• ایران اور سعودی عرب کے درمیان سفارتی تعلقات کی بحالی وقت کی ضرورت ھے۔علامہ عارف واحدی
  • اسلامی تحریک پاکستان کا صوبائی ا نتخابات میں بھرپور حصہ لینے کا اعلان
  • جامعہ جعفریہ جنڈ کے زیر اہتمام منعقدہ عظیم الشان نہج البلاغہ کانفرنـــــس
  • سانحہ پشاور مجرموں کی عدم گرفتاری حکومتوں کی ناکامی کا منہ بولتا ثبوت ہے، ترجمان قائد ملت جعفریہ ہاکستان
  • سانحہ بسری کوہستان !عشرہ گزر گیا مگر قاتل پکڑے گئے نہ مظلومین کو انصاف ملا،
  • راہِ حسین(ع) پر چلنے کیلئے شہداء ملت جعفریہ نے ہمیں بے خوف بنا دیا ہے۔علامہ شبیر حسن میثمی
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان سندھ کے زیر اہتمام کل شہدائے سیہون کی برسی کا اجتماع ہوگا
  • شہدائے سیہون شریف کی برسی میں بھرپور شرکت کو یقینی بنائیں علامہ شبیر حسن میثمی
  • ثاقب اکبر کی وفات پر خانوادے سے اظہار تعزیت کرتے ہیں علامہ عارف حسین واحدی
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کی ثاقب اکبر کے انتقال پر تعزیت

تازه خبریں

دختر رسول اکرم ﷺ حضرت سیدہ فاطمة الزہرا سلام اللہ علیھا کے یوم شہادت پر قائد ملت جعفریہ علامہ ساجد نقوی کا پیغام

ایام فاطمیہؑ کے اختتام پر قائد ملت جعفریہ علامہ ساجد نقوی کا پیغام

ایام فاطمیہؑ کے اختتام پر قائد ملت جعفریہ علامہ ساجد نقوی کا پیغام
  راولپنڈی /اسلام آباد 27دسمبر 2022ء( جعفریہ پریس پاکستان    )قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی نے کہا ہے کہ دختر رسول اکرم سیدہ فا طمة الزہرا ؑ کی یاد اور پیغام کو زندہ رکھنے کےلئے ان کی ذات اقدس سے عقیدت و احترام اور محبت کا اظہار کیا جائے اور ان سے مکمل وابستگی دکھائی جائے، انسانیت اور طبقہ نسواں کی رہنمائی کرنے پر خراج عقیدت و تحسین پیش کیا جائے اور ان کے چھوڑے ہوئے قطعی وحتمی نقوش اور اصولوں کو تلاش کرکے ان کا مطالعہ کیا جائے اور موجودہ دور کے تقاضوں کو ان کے مطابق ڈھالا جائے۔
علامہ ساجد نقوی کا مزید کہنا ہے کہ خاتون جنت کی سیرت و کردار اور اسوہ رہتی دنیا تک خواتین عالم کے لئے مینارہ نور ہے ۔ علی ابن ابی طالب ؑ جیسے شجاع و سخی شوہر کے ہوتے ہوئے اطاعت و تابعداری اورخدمت کو شعار بنایا۔ کوئی فرمائش نہ کی اور اسی طرح جوانان جنت کے سردار فرزندان کے ہوتے ہوئے فاقوں کی زندگی کو ترجیح دی۔ صدیقہ ، طاہرہ اور بتول جیسے القابات کی حامل بی بی ؑ نے اطاعت خداوندی ، عبادت و ریاضت ، عصمت و طہارت ، عفت و پاکدامنی، شرم و حیا ، تربیت اولاد ، علم و کمال ، اعلی تہذیب و اخلاقی اقدار اور قناعت پسندی کے ذریعے مثالی اسلامی معاشرے اور اسلامی تہذیب و اقدار کو بنیادیں فراہم کیں۔اس کی ایک روشن مثال وہ واقعہ کہ جب رسول خدا کے نابینا صحابی ابن مکتوم سے بھی جناب سیدہ ؑنے نظریں جھکائیں فرمایا تو کچھ خواتین نے استفسار کیا کہ وہ تو نابینا ہیں، مگر جواب میں بی بی پاک ؑ نے فرمایا کہ وہ تونابینا ہیں مگر ہم تو نہیں۔
قائد ملت جعفریہ پاکستان کے مطابق جناب سیدہ طاہرہ ؑ کی زندگی اور شخصیت و کردار کا مطالعہ ہر انسان کو مختلف مرحلوں اور شعبوں میں استقامت اور سخت ترین حالات و ماحول میں بھی صبر و ضبط کا درس دیتاہے۔رسول خدا کی بیماری کی تکلیف اوررحلت کا رنج و غم بھی آپ کوحق کی نشر و اشاعت سے باز نہ رکھ سکی ، آپ نے ہمیشہ اپنی گفتگو، انداز و اطواراور جہد مسلسل کے ذریعہ حق و صداقت کو اجاگر کیا۔ آپ کی زندگی میں وہ تمام چیزیں موجود ہیں جو ایک بہتر اور قابل قدر زندگی گزارنے کے لئے ضروری ہوتی ہیں۔بس ضرورت اس بات کی ہے کہ ہم اس زندگی کو قریب سے محسوس کریں اور اسے اپنے دل و دماغ میں اتارنے کی کوشش کریں۔