پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ کے قریب فائرنگ کے ایک واقعے میں ہزارہ قبیلے سے تعلق رکھنے والے کم ازکم چار افراد شہید اور دو زخمی ہوگئے ہیں۔

فائرنگ کا واقعہ کوئٹہ شہر کے شمال میں کچلاک کے علاقے میں پیش آیا۔

کچلاک میں پولیس کے ایک افسر نے فون پر بی بی سی کو بتایا کہ حملے کا نشانہ بننے والے افراد افغانستان سے متصل سرحدی شہر چمن سے کوئٹہ جارہے تھے۔

ان کا کہنا تھا کہ وہ گاڑی جس میں حملے کا نشانہ بننے والے افراد سفر کررہے تھے جلوگیر کے مقام پر تیل ڈالنے کی رکی تھی۔

اس موقع پر نامعلوم مسلح افراد آئے اور انھوں نے گاڑی میں سوار افراد پر فائرنگ کی۔ فائرنگ کے نتیجے میں تین افراد جائے وقوعہ پر شہید ہوگئے جبکہ تین شدید زخمی ہوگئے۔

زخمیوں کو علاج کے لیے کوئٹہ منتقل کیا گیا جہاں ہسپتال میں ایک اور زخمی نے دم توڑدیا۔

پولیس اہلکار کے مطابق یہ ٹارگٹ کلنگ کا واقعہ ہے۔ رواں سال کے دوران بلوچستان میں ہزارہ قبیلے سے تعلق رکھنے والے افراد پر یہ تیسرا حملہ ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here