• کوئٹہ میں ہونے والی دہشتگردی کی مذمت کرتے ہیں شیعہ علماء کونسل پاکستان
  • علامہ شبیر حسن میثمی کا علامہ سید علی حسین مدنی کے کتابخانہ کا دورہ
  • مفتی رفیع عثمانی کی وفات سے علمی حلقوں میں خلاء پیدا ہوا علامہ شبیر حسن میثمی
  • مسئول شعبہ خدمت زائرین ناصر انقلابی کا دورہ پاکستان
  • علامہ عارف واحدی کا سید وزارت حسین نقوی اور شہید انور علی آخوندزادہ کو خراجِ تحسین / دونوں عظیم شخصیات قومی سرمایہ تھیں
  • علامہ شبیر میثمی کی وفد کے ہمراہ علامہ افتخار نقوی سے ملاقات
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے وفد کی مفتی رفیع عثمانی کے فرزند سے والد کی تعزیت
  • سید ذیشان حیدر بخاری متحدہ طلباء محاذ کے مرکزی جنرل سیکرٹری منتخب ہوئے ۔
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے اعلی سطحی وفد کی پرنسپل سیکرٹری وزیر اعظم پاکستان سے تعزیت
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کی نواب شاہ میں پریس کانفرنس

تازه خبریں

ہنگو: گورنمنٹ ہائی اسکول ابراہیم زئی کے باہر دھماکہ، 1 شیعہ نوجوان خودکش حملاور کو پکڑتے ہوۓ شہید

جعفریہ پریس ہنگو: ضلع ہنگو کے علاقے ابراہیم زئی میں طالبان خودکش ایک سکول پر حملہ کرنا چاہتا تھا۔ جسے ایک شیعہ اسٹوڈنٹ اعتراز حسن نے اپنی جان قربان کر کے ناکام بنا دیا۔ خود کش حملہ آور سکول یونیفارم میں اسکول کے گیٹ پر پہنچا۔ اعتزاز حسن بھی گیٹ پر تھا۔ اس کو حملہ آور مشکوک لگا اس نے تفتیش کرنی شروع کر دی اور حملہ آور کو اسکول میں داخل نہیں ہونے دیا۔ حملہ آور سکول میں داخل نہ ہو سکنے کی وجہ سے خود کش مواد کو وہیں بلاسٹ کر دیا جس سے اعتزاز زخمی ہو گیا۔ اسے زخمی حالت میں ڈسٹرکٹ ہسپتال لایا گیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے شہید گیا۔ اعتراز حسن ولد مجید جس کی عمر 14 سال تھی اور وہ گورنمنٹ ہائی اسکول ابراہیم زئی کا اسٹوڈنٹ تھا۔ اس نے انتہائی جرات مندانہ اور بہادری کا مظاہرہ کرتے ہوئے خودکش حملہ آور کو سکول داخل ہونے سے روکا اور اس نے خود ایک مذہبی اور قومی ذمہ داری اداکرتے ہوئے اپنی جان جان آفرین کے سپرد کر دی –