جعفریہ پریس-  سعودی عرب کے مشرقی علاقے قطیف کی جامع مسجد امام علی میں خودکش بم دھماکے کے نتیجے میں تیس سے زائد نمازی شہید اور متعدد زخمی ہوگئے ہیں۔ شہداء میں زیادہ تعداد نوجوانوں کی ہے۔ اطلاعات کے مطابق دھماکہ اس وقت ہوا جب جمعہ کی نماز ادا کی جا رہی تھی نماز جمعہ کے دوران خود کش حملہ آور مسجد میں داخل ہوا، اور نمازیوں کے درمیان پہنچ کر خود کو دھماکے سے اڑا دیا۔ دھماکے کے وقت مسجد میں تقریباً دو سو سے زائد نمازی موجود تھے۔  دھماکہ اتنا شدید تھا کہ مسجد کو بھی شدید نقصان پہنچا ہے۔ دھماکے کے بعد امدادی کارکن موقع پر پہنچ گئے اور زخمیوں و میتیوں کو مقامی ہسپتال میں منتقل کیا گیا۔۔ قانون نافذ کرنے والے اداروں نے مسجد اور اس کے آس پاس کے علاقے کوسیل کردیا ہے۔واضح رہے کہ قطیف شہر میں اہل تشیع کی آبادی زیادہ ہے، اور متاثرہ مسجد بھی اہل تشیع کی جامع مسجد ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here