• اسلامی تحریک پاکستان صوبہ سندھ کا اجلاس کراچی میں منعقد ہوا
  • عزاداری مذہبی و شہری آزادیوں کا مسئلہ، قدغن قبول نہیں، علامہ شبیر میثمی
  • قائد ملت جعفریہ علامہ ساجد نقو ی کی ا پیل پر بھارت میں توہین آمیز ریمارکس پر ملک گیر احتجاج
  • قائد ملت جعفریہ پاکستان کی مختلف شخصیات سے ان کے لواحقین کے انتقال پر تعزیت
  • اسلامی تحریک پاکستان کا گلگت بلتستان حکومت میں شامل ہونے کا فیصلہ
  • علماء شیعہ پاکستان کے وفدکی وفاقی وزیر تعلیم سے ملاقات نصاب تعلیم پر گفتگو مسائل حل کئے جائیں
  • بلدیاتی انتخابات سندھ: اسلامی تحریک پاکستان کے امیدوار بلامقابلہ کامیاب
  • یاسین ملک کو دی جانے والی سزا ظلم پر مبنی ہے علامہ شبیر حسن میثمی شیعہ علماء کونسل پاکستان
  • ملی یکجہتی کونسل اجلاس علامہ شبیر میثمی نے اہم نکات کی جانب متوجہ کیا
  • کراچی میں دہشتگردی کی مذمت کرتے ہیں شیعہ علماء کونسل پاکستان صوبہ سندھ

تازه خبریں

آئمہ جمعہ نے خطبات میں آواز اُٹھائی ، توہین کےخلاف قراردادیں منظور کیںاور بھر پور احتجاج کیا گیا

قائد ملت جعفریہ علامہ ساجد نقو ی کی ا پیل پر بھارت میں توہین آمیز ریمارکس پر ملک گیر احتجاج

قائد ملت جعفریہ علامہ ساجد نقو ی کی ا پیل پر بھارت میں توہین آمیز ریمارکس پر ملک گیر احتجاج
 
آئمہ جمعہ نے خطبات میں آواز اُٹھائی ، توہین کےخلاف قراردادیں منظور کیںاور بھر پور احتجاج کیا گیا
 
اوآئی سی اور مسلم ممالک پیغمبر اسلام اور شعار اسلام کی توہین کےخلاف ایسا لائحہ عمل تیار کریں کہ کسی شیطانی قوت کو آئندہ گستاخی کرنے کی جرات نہ ہو، مقررین
 
راولپنڈی/ اسلام آباد10 جون 2022 ء(جعفریہ پریس پاکستان  )قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی کی ہدایت پر بھارت میں توہین آمیز ریمارکس کیخلاف کراچی سے خیبر اور گوادر سے گلگت بلتستان تک ملک بھر کے تمام بڑے چھوٹے شہروں میں آئمہ جمعہ نے خطبات میں آواز اٹھائی اوربعد از نماز جمعہ ملک گیر احتجاج کیا گیا ۔قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی نے بھارت میں پیغمبر اکرم اور شعائر اسلام کے حوالے سے دیئے گئے ریمارکس کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے پڑوسی ملک میں پیغمبر اسلام اور شعائر اسلام کی بڑھتی بے حرمتی کوانتہائی قابل مذمت و قابل تشویش ور اسلامی ممالک کا رد عمل کو مستحسن قرار دیتے ہوئے مزید موثر اقدامات کرکے بھارتی مسلمانوں کو توہین، دباﺅ اور مظالم سے بچانے کی ضرورت پر زور دیا تھا۔ قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی کی ہدایت پر ملک بھر میں یوم جمعہ یوم احتجاج کے طور پر مناتے ہوئے آئمہ جمعہ نے اپنے خطبات میں اس کےخلاف آواز اُٹھائی اور قراردادیں منظور ہوئیں اور احتجاجی ریلیاں نکالی گئیں ۔اس موقع پر مقرریں نے بھارت میں سیاسی رہنماﺅں کے سیاسی مباحث کے دوران پیغمبر اسلام اور شعائر اسلا م کے خلاف دیئے گئے ریمارکس کو گستاخانہ قرار دیتے ہوئے اس کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے تشویش کا اظہار کیا ۔ انہوں نے کہا کہ سیاسی مباحثہ میں بھی توہین آمیز ریمارکس سے پوری دنیا بالخصوص مسلم دنیا کے جذبات کو شدید ٹھیس پہنچائی گئی اس حوالے سے پاکستان سمیت اسلامی ممالک کی جانب سے جس طرح رد عمل آیا وہ مستحسن البتہ ان اقدامات کو مزید موثر بنانے کی ضرورت ہے تاکہ بھارت میں مقیم مسلمانوں پر دباﺅ، توہین اور مظالم کا خاتمہ کیا جاسکے۔ مقررین نے کہا کہ پیغمبر اسلام اور شعائر اسلام کے بارے ناپاک جسارت کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے ، اس وقت امت مسلمہ کے دل چھلنی ہیںایسی گستاخی برداشت نہیں کی جاسکتی ۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ وزیر اعظم پاکستان ،اوآئی سی اور مسلم ممالک مذمتوں سے آگے بڑھیں اورایسا لائحہ عمل تیار کریں کہ کسی شیطانی قوت کو آئندہ گستاخی کرنے کی جرات نہ ہو۔