• مفتی رفیع عثمانی کی وفات سے علمی حلقوں میں خلاء پیدا ہوا علامہ شبیر حسن میثمی
  • مسئول شعبہ خدمت زائرین ناصر انقلابی کا دورہ پاکستان
  • علامہ عارف واحدی کا سید وزارت حسین نقوی اور شہید انور علی آخوندزادہ کو خراجِ تحسین / دونوں عظیم شخصیات قومی سرمایہ تھیں
  • علامہ شبیر میثمی کی وفد کے ہمراہ علامہ افتخار نقوی سے ملاقات
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے وفد کی مفتی رفیع عثمانی کے فرزند سے والد کی تعزیت
  • سید ذیشان حیدر بخاری متحدہ طلباء محاذ کے مرکزی جنرل سیکرٹری منتخب ہوئے ۔
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے اعلی سطحی وفد کی پرنسپل سیکرٹری وزیر اعظم پاکستان سے تعزیت
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کی نواب شاہ میں پریس کانفرنس
  • اپنے تنظیمی نظام اور سسٹم کو مضبوط سے مضبوط کرنے کی اشد ضرورت ہے۔ ورکر کنونشن
  • مفتی رفیع عثمانی کی وفات علمی حلقوں میں خلا مشکل سے پُر ہوگا علامہ شبیر میثمی

تازه خبریں

ملک میں موجودہ صورت حال کے بارے میں دینی جماعتوں کا اھم ترین اجلاس اسلام آباد میں منعقد ھوا

جعفریہ پریس ملک میں موجودہ صورت حال کے بارے میں دینی جماعتوں کا اھم ترین اجلاس اسلام آباد میں منعقد ھوا جس میں پاکستان میں ھر مسلک کی نمائندہ جماعت نے شرکت کی ،جمعیت علما اسلام ف،اسلامی تحریک پاکستان،جماعت اسلامی،جمعیت علما پاکستان اور جمعیت اھل حدیث نے شرکت کی۔
دھشت گردی کے بارے میں متفقہ موقف اپنایا گیاکہ دھشت گردی کی بالعموم اور سانحہ پشاوربالخصوص شدید مذمت کرتے ھیں،دھشت گردوں کے خلاف جو قومی اتفاق رائے قائم ھوا ھے ھم اس کی بھرپور تائید کرتے ھیں،دھشت گردوں کے خلاف جو اقدامات اٹھائے جا رھے ھیں ان کی مکمل حمایت کرتے ھیں،سزائے موت کی بحالی کا متفقہ طور پر اطمینان کا اظھار کرتے ھیں البتہ بلا امتیاز پھانسیاں دی جائیں جن جن کی سزائے موت کی اپیلیں سپریم کورٹ سے خارج ھو چکی ھیں ان سب دھشت گردوں کو لٹکایا جائے،تمام دھشت گردوں کے کیس فوجی عدالتوں میں بھیجے جائیں،21ویں ترمیم میں مذھبی،مسلکی،لسانی،قومی،سیاسی دھشت گردی کو شامل کیا جائے کسی قسم کی دھشت گردی کو تحفظ نہ دیا جائے،اس ترمیم میں صرف مذھبی،مسلکی دھشت گردی کو شامل کر کے باقی دھشت گردوں کو کیوں تحفظ فراھم کیا جا رھا ھے ،اگر ملک سے دھشت گردی کا خاتمہ کرنا ھے تودھشت گردی کی تمام اقسام کو شامل کیا جائے۔
مدارس کے حوالے سے جو کہا گیا کہ کچھ مدارس ملوث ھیں اس میں یہ موقف اپنایا گیا ھے کہاگر ایسے مدارس کے بارے میں ثبوت موجود ھیں تو اتحاد تنظیمات المدارس دینیہ کو اعتماد میں لے کر ان کے خلاف کاروائی کی جائے۔
آخر میں اس بات کی وضاحت اور تاکید کی گئی ھے کہ ھم چاھتے ھیں کہ تمام قوم متفق ھو گئی کہ دھشت گردی کا مکمل قلع قمع کرنا ھے تو ھم حکومت اور فوج کو پوری طرح سپورٹ کرتے ھیں اور پوری قوم یہی چاھتی ھے کہ ھر قسم کی دھشت گردی کا خاتمہ کیا جائے اور کسی قسم کی دھشت گردی کو تحفظ فراھم نہ کیا جائے۔
آخر میں مولانا فضل الرحمان،علامہ عارف حسین واحدی،صاحبزادہ ابوالخیر زبیر،پروفیسر ساجد میر ،علامہ رمضان توقیر،مولانا عبدالجلیل نقشبندی،پیر محفوظ مشہدی،اکرم درانی،پیر جمیل ھاشمی،حافظ حسین احمد نے پر ھجوم پریس کانفرنس سے خطاب کیا