اسلام آباد:ملی یکجہتی کونسل پاکستان کی طرف سے الفلاح ھال میں اسلامی قوانین کے تحفظ کے عنوان سے ایک کانفرنس پر ایک کانفرنس منعقد ھوئی جس کی صدارت ملی یکجہتی کونسل کے صدر ڈاکٹر ابو الخیر زبیر نے کی،سینیئر نائب صدر ملی یکجہتی کونسل پاکستان قائد ملت جعفریہ علامہ سید ساجد علی نقوی خصوصی طور پر شریک ہوئے ،سیکریٹری جنرل جناب لیاقت بلوچ،علامہ عارف حسین واحدی مرکزی سکریٹری جنرل شیعہ علماء کونسل پاکستان ،ثاقب اکبر،علامہ رمضان توقیر،قاضی آصٖف لقمان،میاں محمد اسلم،حافظ عاکف سعید،قاضی ظفر الحق،علامہ امین شھیدی،مولانا قاسم جعفری،مولانا نصیر موسوی،مولانا وزیر کاظمی،سید جاوید شاہ سید جابر شاہ سید نزاکت شاہ،علامہ زاھد الراشدی،اسد اللہ بھٹو اور دیگر اھم راھنما شریک تھے، قائد ملت جعفریہ پاکستان آیت اللہ علامہ ساجد نقوی نے اپنے جامع خطاب میں کہا کہ اسلامی قوانین کی حفاظت کے لئے ھمیں سیاسی طور پر بھی مضبوط ھونا ھو گا قوت کے مراکز میں اگر ھماری نمائندگی نہیں ھو گی تو اسلامی قوانین کا تحفظ نہیں کر سکتے،ملی یکجہتی کونسل کے ڈپٹی سیکریٹری جنرل علامہ عارف واحدی نے کہا کہ داخلی سیکولر قوتیں اور بیرونی سامراجی دشمن کی مسلسل کوشش ھے کہ امت کی اسلامی روح روح محمدی ھم سے نکال لی جائے اور ھمارے جوانوں کے دین سے دور کر دیا جائے تاکہ ھماری وابستگی دین سے کمزور کی جائے تاکہ قوانین اسلام پر ضرب لگا سکین ھمیں اپنے جوانوں اور عوام میں بیداری اور شعور پیدا کرنا ھو گا۔
علامہ عارف واحدی نے کہا کہ افسوس کا مقام ھے کہ آج مسلمانوں کو آمریاکا کا صدر ٹرمپ لیکچر دے رھا ھے اور سرزمین وحی پر آکر یہودہوں کے ایجنڈے کے مطابق امت مسلمہ میں تفرقہ ڈالنے کی کوشش کر رھا ھے دشمن کی ھر وقت کوشش ھے کہ ھمیں لڑائے تو جواب میں ھم مل کر امت کے اتحاد کی کوشش کریں گے تو قوانین اسلامی کا تحفظ کر پائیں گے۔آخر میں اس حوالے سے ایک مشترکپ اعلامیہ بھی دیا گیا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here