• مفتی رفیع عثمانی کی وفات سے علمی حلقوں میں خلاء پیدا ہوا علامہ شبیر حسن میثمی
  • مسئول شعبہ خدمت زائرین ناصر انقلابی کا دورہ پاکستان
  • علامہ عارف واحدی کا سید وزارت حسین نقوی اور شہید انور علی آخوندزادہ کو خراجِ تحسین / دونوں عظیم شخصیات قومی سرمایہ تھیں
  • علامہ شبیر میثمی کی وفد کے ہمراہ علامہ افتخار نقوی سے ملاقات
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے وفد کی مفتی رفیع عثمانی کے فرزند سے والد کی تعزیت
  • سید ذیشان حیدر بخاری متحدہ طلباء محاذ کے مرکزی جنرل سیکرٹری منتخب ہوئے ۔
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کے اعلی سطحی وفد کی پرنسپل سیکرٹری وزیر اعظم پاکستان سے تعزیت
  • شیعہ علماء کونسل پاکستان کی نواب شاہ میں پریس کانفرنس
  • اپنے تنظیمی نظام اور سسٹم کو مضبوط سے مضبوط کرنے کی اشد ضرورت ہے۔ ورکر کنونشن
  • مفتی رفیع عثمانی کی وفات علمی حلقوں میں خلا مشکل سے پُر ہوگا علامہ شبیر میثمی

تازه خبریں

قائد ملت جعفریہ پاکستان حضرت آیت اللہ علامہ سید ساجد علی نقوی کو فول پروف سکیورٹی فراہم کی جائے ،علامہ سید اشتیاق حسین کاظمی

جعفریہ پریس – حوزہ علمیہ امام حسن مجتبیٰ (ع) سرائے عالمگیر کے پرنسپل علامہ سید اشتیاق حسین کاظمی نے کہا ہے کہ قائد ملت جعفریہ پاکستان حضرت آیت اللہ علامہ سید ساجد علی نقوی کی حفاظت اور انہیں فول پروف سکیورٹی فراہم کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی کے حوالے سے وزارت داخلہ کی جانب سے  بھیجے گئے مراسلے پرتبصرہ کرتے  ہوئے کیا۔ وزارت داخلہ کی جانب سے  بھیجے گئے مراسلے میں کہا گیا تھا کہ علامہ سید ساجد علی نقوی کو دہشت گردی کے خطرات لاحق ہیں۔ سید اشتیاق کاظمی نے اس مراسلے پرتبصرہ کرتے  ہوئے کہا کہ حکومت کی جانب سے خطرات اور ممکنہ دہشت گردانہ حملے سے آگاہ کرنا گرچہ حکومت کا اچھا اقدام ہے، مگر یہ کافی نہیں ہے، قائد ملت جعفریہ پاکستان کی حفاظت اور انہیں فول پروف سکیورٹی فراہم کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ خطرات کے پیش نظر قائد ملت جعفریہ کو اپنی فعالیات محدود کرنے کی ہدایت دہشت گردوں کے سامنے حکومت کا اعلان بے بسی ہے۔ وزارت داخلہ کی طرف سے یہ کہنا کہ ہم کسی حادثہ کے ذمہ دار نہ ہوں گے، انتہائی غیر ذمہ دارانہ بیان ہے۔ علامہ سید اشتیاق حسین کاظمی نے کہا کہ ہم حکومت سے پُرزور مطالبہ کرتے ہیں کہ قائد ملت جعفریہ پاکستان حضرت آیت اللہ علامہ سید ساجد علی نقوی کو فول پروف سکیورٹی فراہم کی جائے۔
واضح رہے کہ وزارت داخلہ کی جانب سے قائد ملت جعفریہ کو سیکورٹی خدشات کا یہ دوسرا مرسلہ جاری کیا گیا  ہے جس میں 25 تک تمام دوراجات منسوخ کرنے کی درخواست کی گئی ہے جبکہ اس سے قبل شیخوپورہ سے بھی ایک جنگ نیوز پیپر شیخوپورہ کے رپورٹر نے وزارت داخلہ کی جانب سے اس خدشات کی نشاندھی کی تھی-